ڈاکٹر نے سرراہ اپنی الیکٹرک سکوٹی پر پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی کیونکہ ۔ ۔ ۔

ڈاکٹر نے سرراہ اپنی الیکٹرک سکوٹی پر پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی کیونکہ ۔ ۔ ۔
ڈاکٹر نے سرراہ اپنی الیکٹرک سکوٹی پر پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی کیونکہ ۔ ۔ ۔

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ممبئی (ویب ڈیسک) الیکٹرک سکوٹیز کئی دنوں سے لگاتار بھارت کی مختلف ریاستوں میں مالکان کیلئے وبال جان بنی ہوئی ہیں۔ڈاکٹر پرتھوی کے مطابق وہ سکوٹی کی خراب کارکردگی سے شدید پریشان تھے جو بیٹری مکمل چارج کرنے کے باوفود کم فاصلہ طے کرتی تھی، انہوں نے غصے کی حالت میں قریبی پٹرول پمپ سے پٹرول منگوایا اور سکوٹی پر چھڑک کر اپنے ہاتھوں سے آگ لگا دی۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق تامل ناڈو میں الیکٹرک سکوٹی کی ناقص کارکردگی پر برہم ایک ڈاکٹر نے سرراہ اپنی سکوٹی پر خود اپنے ہاتھوں سے پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی، یہ واقعہ تامل ناڈو کے تروپتور ضلع کے امبور بائی پاس روڈ پر پیش آیا۔ مقامی میڈیا کے مطابق ڈاکڑ پرتھوی راج نے 3 ماہ قبل اولا ایس ون الیکٹرک سکوٹی خریدی تھی جس کی قیمت مقامی سطح پر ایک لاکھ 36 ہزار سے زائد بتائی گئی ہے۔