سعودی مذہبی پولیس کا اعلیٰ افسر شرمناک حرکت کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار

سعودی مذہبی پولیس کا اعلیٰ افسر شرمناک حرکت کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار
سعودی مذہبی پولیس کا اعلیٰ افسر شرمناک حرکت کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار

  



ریاض(نیوز ڈیسک)سعودی عرب مذہبی اور اخلاقی قوانین کو نافذ کرنے والے ادارے کمپنی برائے امربالمعروف و نہی عن المنکر کے سنیئر افسر کو ایک لڑکی پر دباﺅ ڈال کر جنسی تعلقات پر مجبور کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیاہے۔آن لائن اخبار ”سعودی گزٹ“کے مطابق کمپنی کی جازان شہر میں شاخ کے سربراہ کے سامنے ایک لڑکی کا گیس لایا گیا جسے ایک نامحرم کے ساتھ غیر قانونی موجودگی پر گرفتار کیا گیا تھا۔قانون پر علمدرآمد کی بجائے سینئر افسر نے لڑکی کو دھمکی دی کہ وہ اس کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کرے ورنہ اس کا کیا عام پبلک کے سامنے لے آیا جائے گا لڑکی نے بدنامی کے خوف سے ہتھیار ڈال دیئے۔بعدازاںایک نوجوان کی طرف سے رشتہ آنے پر متاثرہ لڑکی نے افسر سے درخواست کی کہ وہ اس کے ساتھ تعلق ختم دے لیکن مذکورہ افسر نے انکار کر دیا جس پر وہ مجبورًا پولیس کے پاس چلی گئی ۔پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے افسر کو لڑکی کے ساتھ گرفتار کر لیا ۔مزید کاروائی کیلئے کیس بیورو آف انویسٹی کیشن اور پبلک پرا سیکیوشن کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس