خامنہ ای کے مشیر کا الرقہ کے کْردوں کے خلاف اعلان جنگ

خامنہ ای کے مشیر کا الرقہ کے کْردوں کے خلاف اعلان جنگ

  

تہران(این این آئی)ایران کے رہبر آیت اللہ علی خامنہ ای کے مندوب اور مشیر خاص علی اکبر ولایتی نے شام کے شہر الرقہ میں کرد فورسز کے خلاف آپریشن کا اعلان کیا ہے اورکہاہے کہ اسد رجیم کی وفادار فوج جلد ہی الرقہ کی طرف پیش قدمی کرے گی جہاں آج کل داعش سے آزاد کرائے گئے شہر پر امریکی حمایت یافتہ کرد ڈیموکریٹک فورسز کا کنٹرول قائم ہے۔عرب ٹی وی کے مطابق ایرانی سپریم لیڈر کے مشیر علی اکبر ولایتی سرکاری دورے پر گذشتہ روز لبنان کے دارالحکومت بیروت پہنچے تھے جہاں انہوں نے لبنانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نبیہ بری سمیت کئی دوسرے اعلیٰ حکام سے ملاقاتیں کیں۔ اس موقع پر ولایتی نے کہا کہ اسد رجیم کی وفادار فوج دریائے فرات کے مشرقی کنارے پر واقع شہر الرقہ کی طرف پیش قدمی کرے گی۔ مبصرین خدشہ ظاہر کر رہے ہیں کہ’الرقہ میں ایران اور امریکا ’پراکسی وار‘ چھیڑ سکتے ہیں۔

اگر شامی فوج اور اس کی حامی ایرانی ملیشیاؤں نے الرقہ کی طرف پیش قدمی کی تو خدشہ ہے کہ امریکا الرقہ کو بچانے کے لیے اپنی فوج میدان میں اتار دے۔ایرانی سپریم لیڈر کے مشیر نے امریکا پر شام کو تقسیم کرنے کا الزام عاید کیا۔ انہوں نے کہا کہ امریکا شام کو دو حصوں میں تقسیم کرنا چاہتا ہے۔ امریکی ایسے ہی عراق کو بھی تقسیم کرنا چاہتے تھے۔ وہ عراق کو تقسیم نہیں کرسکے اور شام کے خلاف اپنی سازشوں میں بھی کامیاب نہیں ہوں گے۔

مزید :

عالمی منظر -