ناظم آباد ، کار چوری میں ملوث بین الصوبائی گروہ گرفتار ،51مسروقہ گاڑیاں برآمد

ناظم آباد ، کار چوری میں ملوث بین الصوبائی گروہ گرفتار ،51مسروقہ گاڑیاں ...

  

کراچی(این این آئی)سندھ رینجرز کے سیکٹر کمانڈربریگیڈیئر نسیم پرویزنے ایس ایس پی سینٹرل عرفان بلوچ کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ناظم آباد میں پولیس اور رینجرزنے مشترکہ اسنیپ چیکنگ میں 2 مشتبہ افرادقاضی منیب احمد صدیقی اور شیراز کو گرفتار کیا جن کے قبضے سے 51 مسروقہ گاڑی برآمد کر کے گروہ کے مزید5 سے 6 سرغنہ کو بھی گرفتار کر لیا۔ انہوں نے بتایا کہ انٹیلی جنس معلومات پر کارروائی کی گئی۔ملزمان کا تعلق بین الصوبائی کار لفٹرگروہ سے ہے، بھاری منافع کا جھانسہ دے کر رینٹ کے لیے گاڑی حاصل کرتے ، گاڑیاں سی پیک میں استعمال کرنے کا بھی چھانسہ دیا جاتا تھاکچھ عرصہ معاوضہ دینے کے بعد گاڑیاں غائب کر لی جاتیں۔ مسروقہ گاڑیوں کو اندرون سندھ کے مختلف علاقوں میں ڈمپ کرنے کے بعد فروخت کر دیا جاتاتھا۔ کارروائی میں16 افراد کو گرفتارکیا گیا10کو رہا کر دیا گیاگیا ،5سے6افرادگروہ کے سرغنہ ہیں جن سے تفتیش جاری ہے،رینجرزکے مینڈیٹ میں کیاکیاہے سوال پربریگیڈیئر نسیم نے کہا کہ بھتہ خوری کی روک تھام اورٹارگٹ کلنگ روکنارینجرزمینڈیٹ ہے،یہ کوئی نہیں پوچھتااندرون سندھ کنویں بنانا،بارشوں میں عوام کی مدد کرنا،عمارت گرنے کی صورت میں ملبہ ہٹانا،اسکول بنانا رینجرزکامینڈیٹ ہے یانہیں ،کوئی نہیں پوچھتا۔انہوں نے بتایا کہ تحویل میں لی گئی گاڑیوں کے مالکان بھی پریس کانفرنس میں موجودہیں،قانونی طریقہ کارکے مطابق گاڑیاں اصل مالکان کے حوالے کردی جائیں گی۔

گاڑیاں برآمد

مزید :

علاقائی -