”بڑے ٹی وی چینل میں ایک شخص اس وقت تک خواتین کی چھٹیاں منظور نہیں کرتا جب تک۔۔۔“ معروف صحافی نے نیوز چینل میں خواتین کو ہراساں کرنے سے متعلق تہلکہ خیز انکشاف کر دیا، سوشل میڈیا پر ہنگامہ برپا ہو گیا

”بڑے ٹی وی چینل میں ایک شخص اس وقت تک خواتین کی چھٹیاں منظور نہیں کرتا جب ...
”بڑے ٹی وی چینل میں ایک شخص اس وقت تک خواتین کی چھٹیاں منظور نہیں کرتا جب تک۔۔۔“ معروف صحافی نے نیوز چینل میں خواتین کو ہراساں کرنے سے متعلق تہلکہ خیز انکشاف کر دیا، سوشل میڈیا پر ہنگامہ برپا ہو گیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) دنیا کے تمام ممالک میں خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کے واقعات سامنے آتے ہیں اور المیہ یہ ہے کہ ہر گزرتے دن کیساتھ اس میں اضافہ ہوتا چلا جا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ویرات کوہلی نے ریٹائرمنٹ سے متعلق اہم اعلان کر دیا، پوری دنیا میں اپنے مداحوں کو پریشان کر دیا

صرف ان پڑھ افراد ہی اس میں ملوث نہیں ہیں بلکہ پڑھے لکھے افراد بھی خواتین کو جنسی طورپر ہراساں کرنے سے باز نہیں آتے اور افسوسناک بات یہ ہے کہ پاکستان کی میڈیا انڈسٹری میں بھی ایسا ہو رہا ہے۔ حال ہی میں خاتون صحافی مہوش اعجاز نے اس معاملے پر بات کی تو معروف صحافی منصور علی خان نے ایسا شرمناک اور تہلکہ خیز انکشاف کیا جو پاکستانیوں کی آنکھیں کھول دینے کیلئے کافی ہے۔

خاتون صحافی مہوش اعجاز نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں لکھا ”میں حیران ہوں کہ اگر میڈیا انڈسٹری میں کام کرنے والی خواتین اس معاملے پر بول پڑیں تو کتنے لوگوں کی اصلیت سامنے آ جائے گی۔“

ان کی جانب سے یہ پیغام جاری ہوا تو معروف صحافی و پروگرام اینکر منصور علی خان نے جواب دیا کہ ”معروف چینل میں ایک شخص کام کرتا ہے جو خواتین نیوز اینکرز کی چھٹیاں اس وقت تک منظور نہیں کرتا جب تک وہ اس کیساتھ 10 سے 15 منٹ بیٹھ نہ گزاریں۔“

منصور علی خان نے انتہائی افسوسناک اور تہلکہ خیز انکشاف کیا جس سے میڈیا انڈسٹری میں کام کرنے والی خواتین کو جنسی ہراساں کئے جانے کی ایک جھلک نظر آتی ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ ایک اور خاتون صحافی فریحہ ادریس نے بھی منصور علی خان کی اس بات کی تائید کی اور لکھا ”میں تائید کرتی ہوں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -