بیماریوں کی تشخیص کیلئے نومولود بچوں کی سکریننگ کرانے سے متعلق بل منظور 

  بیماریوں کی تشخیص کیلئے نومولود بچوں کی سکریننگ کرانے سے متعلق بل منظور 

  



سلام آباد(آئی این پی)قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قومی صحت نے بیماریوں کی تشخیص کیلئے نومولود بچوں کی سکریننگ کرانے سے متعلق بل منظور کر لیا،جبکہ صوبوں کو بھی اس حوالے سے قانون سازی کرنے کی سفارش کی ہے،کمیٹی نے پی ایم ڈی سی کی تحلیل کے معاملے پر الگ اجلاس بلانے کا فیصلہ کرلیا، وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کمیٹی کو بتایا کہ مختلف وجوہات کی وجہ سے پولیو کیسز اس سال بڑھے،خیبرپختونخوا میں لاکھوں کی تعداد میں والدین پولیو ویکسینیشن سے انکار کرتے ہیں، ان علاقوں میں پولیو ویکسینیشن سے انکار زیادہ ہوئے ہیں جہاں جرائم زیادہ ہیں۔پیر کو قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قومی صحت کا اجلاس چیئرمین خالد حسین مگسی کی صدارت میں ہوا،اجلاس میں فیڈرل نیو بارن اسکریننگ بل2019پر غور کیا گیا،وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ اصولی طور پر اس پر کوئی مسئلہ نہیں،اس بل سے شائد اسلام آباد کی حد تک تو ہم سکریننگ کر لیں لیکن سارے صوبوں میں ایک دم سے اس پر عملدرآمد کرنا مشکل ہو گا،اسلام آباد میں ماڈل پر ائمری ہیلتھ کیئر قائم کرنے جا رہے ہیں، کمیٹی نے بل منظور کرتے ہوئے صوبوں کو بھی اس حوالے سے قانون سازی کرنے کی سفارش کر دی۔

 بل منظور 

مزید : علاقائی