خیبر،اساتذہ پر تشدد کیخلاف رضا کاروں کا احتجاج جاری،سکول بند

خیبر،اساتذہ پر تشدد کیخلاف رضا کاروں کا احتجاج جاری،سکول بند

  



خیبر (بیورورپورٹ)بازار ذخہ خیل امن تنظیم کے رضا کاروں کا اساتذہ پر تشددکے خلاف تیسرے روز بھی دور افتادہ علاقہ میں 25سکول بند،محکمہ تعلیم کے اعلی حکام خواب خرگوش سو گئے ہیں،اساتذہ کو تحفظ اور رضا کاروں کو سزا ملنے تک احتجاج جا ری رہیگا،صدر اے ٹی اے ایسوسی ایشن گز شتہ روز لنڈیکوتل کے دور افتادہ علاقہ بازار ذخہ خیل امن تنظیم کے کچھ رضا کاروں نے اساتذہ پر تشدد اس وقت کیا جب اساتذہ ڈیوٹی سے اپنے گاڑی میں واپس آرہے تھے وہاں پر موجود امن تنظیم کے رضا کاروں نے گا ڑی کو روک کر ساتھ لے جانے کو کہا اساتذہ کی طر ف سے انکار پر رضا کاروں نے ایسے شدید تشد د کا نشانہ بنایا جس پر آل ٹیچر ایسوسی ایشن نے احتجاج شروع کر تے ہوئے بازار ذخہ خیل میں تقریبا 25میل اور فی میل سکولوں کو بند کر دیا اس سلسلے میں آل ٹیچر ایسوسی ایشن کے صدر نصیر شاہ آفریدی نے کہا کہ اساتذہ معمار قوم ہیں لیکن معمار قوم بازار ذخہ خیل میں بلکل غیر محفوظ ہیں رضا کاروں کی طرف تشدد انتہائی ظلم ہیں انہوں نے کہا کہ جب تک رضاکاروں کو سزا نہیں ملتی اور تحریری تحفظ ضمانت نہیں دی جا تی اس وقت تک احتجاج جا ری رہیگا اور احتجاج کا دائرہ بھی مذید پھلایا جا ئے گا انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں محکمہ تعلیم کے اعلی حکام کو درخواست بھی دی ہیں 

مزید : پشاورصفحہ آخر