وہ ریٹائرڈ فوجی جس کی وجہ سے وزیراعظم عمران خان کو ایک اور یوٹرن لینا پڑگیا

وہ ریٹائرڈ فوجی جس کی وجہ سے وزیراعظم عمران خان کو ایک اور یوٹرن لینا پڑگیا
وہ ریٹائرڈ فوجی جس کی وجہ سے وزیراعظم عمران خان کو ایک اور یوٹرن لینا پڑگیا

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)31ستمبر کو دفترخارجہ کی طرف سے اعلان کیا گیا تھا کہ میجر جنرل (ر)سعد خٹک کو سری لنکا میں پاکستان کا سفیر تعینات کیا جا رہا ہے۔ اسی روز کابینہ کے اجلاس میں کئی وزراءنے سعد خٹک کی تعیناتی پر شدید تحفظات کا اظہار کیا جس پر مبینہ طور پروزیراعظم عمران خان نے اس کی تعیناتی روک دی تھی لیکن اب ایکسپریس ٹربیون نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ وزیراعظم کے اس حکم کے باوجود سعد خٹک کو سری لنکا میں سفیر لگایا جا رہا ہے۔

اخبار نے دفترخارجہ کے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ وزیراعظم کی طرف سے تعیناتی روک دیئے جانے کے باوجود دفترخارجہ نے اسد خٹک کی تعیناتی کا پراسیس جاری رکھا اور اکتوبر کے پہلے ہفتے میں سری لنکن حکومت کو سعد خٹک کی تعیناتی پر رضامند کے لیے لکھ دیا۔آج تک سری لنکن حکومت سے کئی گئی وہ درخواست واپس نہیں لی گئی، جس کا مطلب ہے کہ سعد خٹک کو سفیر تعینات کیے جانے کا پراسیس اب بھی جاری ہے اور سری لنکن حکومت کی رضامندی کا انتظار ہو رہا ہے۔

دفترخارجہ کے اعلیٰ عہدیدار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر اخبار کو بتایا کہ سری لنکن حکومت کسی بھی وقت اپنی رضامندی دے سکتی ہے۔ تاہم سری لنکا میں صدارتی انتخابات ہونے والے ہیں، چنانچہ امکان ہے کہ سری لنکن حکومت انتخابات کے بعد ہی اس حوالے سے کچھ بتائے گی۔ اگرچہ پاکستان اب بھی سعد خٹک کی نامزدگی واپس لے سکتا ہے لیکن ایسا کرنا غیرمعمولی بات ہو گی کیونکہ یہ معاملہ آخری مراحل میں داخل ہو چکا ہے۔ واضح رہے کہ سعد خٹک کی نامزدگی ’نان کیریئر ایمبیسڈرز‘ کے لیے مختص کیے گئے 20فیصد کوٹے میں کی گئی تھی۔ اس کوٹے کا ایک بڑا حصہ ریٹائرڈ فوجی افسران کے لیے مختص کیا گیا ہے۔روایتی طور پر سری لنکا، یوکرین، برونائی، بوسنیا، نائیجیریا، ماریشس، مالدیپ اور اردن میں ریٹائرڈ فوجی افسروں کو سفیر تعینات کیا جاتا ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد