سید سعود ساحر مرحوم

سید سعود ساحر مرحوم

  

ممتاز اخبار نویس اور دانشور سید سعود ساحر اسلام آباد میں انتقال کر گئے۔ وہ کچھ عرصہ سے علیل تھے لیکن ہمت اور حوصلے کے ساتھ بیماری کا سامنا کر رہے تھے۔ قومی صحافت میں ان کو ایک پرجوش اور باکردار شخص کے طور پر یاد رکھا جائے گا۔ وہ مختلف اداروں سے وابستہ رہے، لیکن ان کی آن بان برقرار رہی۔راولپنڈی پریس کلب کے صدر رہے اور پیشہ ورانہ تنظیموں میں بھی قائدانہ کردار ادا کرتے رہے۔ ان کا آبائی وطن سہارن پور تھا لیکن پاکستان سے وابستگی یہاں کھینچ لائی، ہجرت کا اعزاز حاصل کیا اور نئے وطن کی تعمیر و ترقی میں بھرپور کردار دا کرتے رہے۔ انہیں مرعوب کیا جا سکتا تھا نہ للچایا جا سکتا تھا۔ وہ اپنے دبنگ لہجے، پیشہ ورانہ جستجو اور بے ساختہ پن کی وجہ سے بھلائے نہیں جا سکتے۔ اللہ تعالیٰ ان کی مغفرت فرمائے اور نوجوان اخبارنویسوں کو ان کی لگن، ان کی کمٹمنٹ اور ان کی بے باکی عطا کردے۔

مزید :

رائے -اداریہ -