شہریوں کے حق روزگارکو آئین میں تحفظ حاصل ہے، لاہورہائیکورٹ

  شہریوں کے حق روزگارکو آئین میں تحفظ حاصل ہے، لاہورہائیکورٹ

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ نے قراردیاہے کہ شہریوں کے حق روزگارکو آئین میں تحفظ حاصل ہے،مسٹر جسٹس جواد حسن نے یہ آبزرویشن تحسین مسیح نامی شہری کی ملازمت کا معاملہ ڈائریکٹرجنرل سپیشل ایجوکیشن کو بھجواتے ہوئے اپنے تحریری فیصلے میں دی ہے۔عدالت میں تحسین مسیح کے وکیل محمد بلال محمود نے موقف اختیارکیا کہ درخواست گزار ایف اے پاس ہے اسے محکمہ سپیشل ایجوکیشن میں پہلے سکیل میں خاکروب بھرتی کیاگیا،تمام قانونی تقاضے پورے کرنے کے باوجود اب اسے ڈیوٹی جوائن کرنے کی اجازت نہیں دی جارہی،اس نے سیکرٹری سپیشل ایجوکیشن اور ڈائریکٹر جنرل سپیشل ایجوکیشن کو کئی درخواستیں دیں لیکن اس کی شنوائی نہیں ہوئی،فاضل جج نے درخواست گزار کے وکیل کے اس موقف کو اپنے تحریری حکم کا حصہ بنایا ہے جس میں کہا گیاہے کہ آئین کے آرٹیکل4کے تحت قانون کے برخلاف کسی شہری کے کام میں رکاوٹ نہیں ڈالی جاسکتی اور نہ ہی اس کے خلاف ایسی کارروائی کی جاسکتی ہے جو اس کے لئے نقصان دہ ہو،عدالت نے ڈی جی محکمہ سپیشل ایجوکیشن کو ہدایت کی ہے کہ درخواست گزار کا موقف سن کر سختی سے قانون کے مطابق ایک ماہ کے اندر فیصلہ کیا جائے،عدالت نے مزید ہدایت کی اس بابت جو بھی فیصلہ کیا جائے اس کی ٹھوس وجوہات بھی بیان کی جائیں۔

آبزرویشن

مزید :

صفحہ آخر -