وزیر اعظم نے گلگت بلتستان کو صوبہ بنانے کا اعلان نہیں کیا، نگراں وزیر اعلیٰ 

وزیر اعظم نے گلگت بلتستان کو صوبہ بنانے کا اعلان نہیں کیا، نگراں وزیر اعلیٰ 

  

   گلگت (آئی این پی)نگراں وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان میر افضل نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان جشن آزادی کے تقریب میں شرکت کے لیے آئے تھے، انہوں نے گلگت بلتستان کو صوبہ بنانے کا اعلان نہیں کیا، صوبے پر مشاورت جاری ہے۔ بدھ کو گلگت میں پر یس  کانفرنس کرتے ہوئے نگراں وزیر اعلی میر افضل نے کہا کہ گلگت بلتستان میں صاف و شفاف الیکشن ہونگے۔انہوں نے کہا کہ الیکشن ایکٹ 2017 پر عمل درامد کروانا صوبائی الیکشن کمشنر کا کام ہے، وہ جو ہدایات دینگے اس پر عمل کرنا صوبائی حکومت کی ذمہ داری ہے۔نگراں وزیر اعلی گلگت بلتستان میر افضل نے کہا کہ اب تک الیکشن کمشنر نے 95 سے زائد نوٹسز سیاسی جماعتوں کو بجھوایا ہیں اور سب سے زیادہ پاکستان پیپلز پارٹی کو کو بجھوائے ہیں۔.جن کو نوٹسز بجھوائے ہیں ان کے خلاف قانون کے تحت کاروائی ہوگی۔انہوں نے کہا کہ الیکشن کو پر امن بنانے کے لیے سیکورٹی پلان بہت جلد جاری کردیا جائے گا۔الیکشن شیڈول کے بعد وفاقی وزرا کا  دورہ گلگت بلتستان کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ یہ کام الیکشن کمیشنر کا ہے، ہم صرف الیکشن کمیشنر کی معاونت کے لیے بیٹھے ہیں۔دوسری جانب چیف الیکشن کمشنر گلگت بلتستان راجہ شہباز نے کہا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے الیکشن ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی ہے، جس پر پیپلز پارٹی کو نوٹس جاری کیا گیا ہے۔جاری پریس ریلیز میں انہوں نے کہا کہ الیکشن ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر تمام جماعتوں کے 95 افراد کو نوٹسز بھیجے جاچکے ہیں۔راجہ شہباز نے کہا کہ  گلگت بلتستان  قانون ساز اسمبلی کے انتخابات سے قبل دھاندلی کے الزامات بے بنیاد ہیں۔ گلگت بلتستان میں صاف اور شفاف الیکشن ہوں گے۔ واویلا مچایا جارہا ہے، بتایاجائے کہاں دھاندلی ہو رہی ہے۔چیف الیکشن کمشنر گلگت بلتستان کے مطابق کورونا ایس او پیز کو دیکھ کر کوڈ آف کنڈکٹ بنایا گیا ہے۔ گلگت بلتستان کا ماحول ماحول پرامن ہے، اگر کوئی مسئلہ ہے تو نشاندہی کی جائے۔

 نگراں وزیر اعلیٰ 

مزید :

صفحہ آخر -