حکومت نے تین سال کیلئے رولنگ سپیکٹرم سٹریٹجی کی منظوری دیدی

        حکومت نے تین سال کیلئے رولنگ سپیکٹرم سٹریٹجی کی منظوری دیدی

  

 اسلام آباد(آئی این پی) وفاقی حکومت نے ''رولنگ اسپیکٹرم سٹریٹجی 2020-2023کی منظوری دے دی،  بدھ کو  پاکستان  ٹیلی کمیونیکیشن  اتھارٹی (پی ٹی اے)  کی جانب سے  جاری کیئے گئے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ تیز رفتار ٹیلی کام نیٹ ورک کے فروغ کو یقینی بنانے کے لئے وفاقی حکومت نے تین سالہ ''رولنگ اسپیکٹرم اسٹریٹیجی 2020-2023کی منظوری دے دی ہے۔ یہ سپیکٹرم ماسٹر پلان کا بنیادی ہدف تھا جبکہ اس کی رپورٹ پاکستان کے لئے قابل اطلاق بین الاقوامی بہترین طریقہ کار کے مطابق تیار کی گئی ہے۔ سپیکٹرم ماسٹر پلان  2020اور 2023کے دوران سپیکٹرم سے متعلق ایلوکیشن کے ساتھ ساتھ سپیکٹرم سے متعلقہ پالیسیوں کے جائزے کے لئے مستقبل کا روڈ میپ فراہم کرتا ہے۔اس رپورٹ سے وزارت آئی ٹی اینڈ ٹیلی کام، پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی  اور فریکوینسی ایلوکیشن بورڈنے  3 سالہ رولنگ اسپیکٹرم سٹریٹجی کی تشکیل میں معاونت حاصل کی ہے۔جو کہ ٹیلی کمیونیکیشن پالیسی 2015 کا ایک اہم حصہ ہے۔ واضح رہے کہ سپیکٹرم روڈ میپ کی اشاعت سے کمرشل آپریٹرز کو ان کے نیٹ ورک کے لئے سرمایہ کاری کی منصوبہ بندی میں مدد ملے گی۔ چونکہ ٹیلی کام کے شعبے میں تبدیلی کی رفتار تیز ہے جب کہ شعبے کو بھی شفافیت کے ساتھ ترقی کی جانب گامزن کرنا مقصود ہے لہذاسپیکٹرم پلان پرہر 3 سال بعد نظرثانی کی ضرورت ہے۔  یہ رپورٹ وزارت آئی ٹی، پی ٹی اے، اور ایف اے بی کی مشترکہ کاوشوں سے تیار کی گئی ہے۔

سپیکٹرم پالیسی

مزید :

صفحہ آخر -