60ملین کرپشن سکینڈل کیس، ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع

   60ملین کرپشن سکینڈل کیس، ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے نیشنل ہائی وے اتھارٹی میں 60 ملین کرپشن سکینڈل کیس کے تین ملزمان کے مزید 18 نومبر تک جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع کر دی، عدالت نے ملزمان کی بریت کی درخواست پر فیصلہ بھی محفوظ کر لیاہے، جوڈیشل ریمانڈ کے ملزمان میں نوید مراد، شوکت بلوچ اور اعجاز احمد شامل ہیں دیگر تین ملزمان کو بطور ریفرنس طلب کر رکھا تھا، ملزمان میں ایل اے سی نوید مراد،ڈپٹی اکاو نٹس حسن محمود،محمد فاروق اور اسٹنٹ فنانس آفیسر محمد اسماعیل، شوکت حسین اور اعجاز احمد شامل ہیں، احتساب عدالت کے جواد الحسن نے کیس پر سماعت کی،ملزمان کے خلاف ریفرنس دائر کیا جا چکا ہے، نیب ریفرنس میں کہا گیا ہے کہ ملزمان کی جانب سے 265 کے کے تحت بریت کی درخواست دائر کی گئی. تمام ملزمان پر حکومتی خزانے کو 60ملین روپے نقصان پہچانے کا الزام عائد ہے،ملزمان نے باہمی ملی بھگت سے بہاولپور تا رحیم یار خان روڈ توسیع منصوبے میں کروڑوں روپے کی بوگس ادائیگیاں کیں، ملزمان نے 2006 ء اور 2007ء کے دوران زمین کی خریداری کی مد میں سینکڑوں بوگس اکاؤنٹس میں 60ملین کی خطیر رقم منتقل کی، نیب لاہور نے ملزمان کے خلاف چیئر مین این ایچ اے کی درخواست پر 2017 ء میں کارروائی کا آغاز کیا تھا۔ 

مزید :

علاقائی -