چرن جیت سنگھ قتل کیس میں نامزد ملزم بری 

چرن جیت سنگھ قتل کیس میں نامزد ملزم بری 

  

پشاور(نیوزرپورٹر)انسداد دہشت گردی پشاور کی خصوصی عدالت نے چرن جیت سنگھ قتل کیس میں نامزد ملزم کو بری کردیا تاہم جعلی نمبر پلیٹ گاڑی رکھنے پر ایک سال قید اور دس ہزار جرمانہ کی سزاء سنادی ملزم  طارق سکنہ کگہ ولہ بڈھ بیر پشاور کو پولیس نے سکھ کمیونٹی کے مقامی رہنماء چرن جیت سنگھ قتل کیس میں گرفتار کیا تاہم ملزم کے خلاف قتل اور دہشت گردی کا کیس ثابت نہیں ہوا لیکن جعلی نمبر پلیٹ گاڑی رکھنے پر عدالت نے ملزم کو ایک سال قید اور دس ہزار روپے جرمانہ کی سزاء سنادی  واضح رہے کہ 29 مئی 2018کو نامعلوم ملزمان نے چرن جیت سنگھ ولد دیال سنگھ سکنہ سرکی گیٹ کو بمقام سکیم چوک کوہاٹ روڈ پشاور ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنا کر قتل کیا تھا  جس کے بعد پولیس تفتیش  کے دوران ملزم طارق کو گرفتار کیا تھا اور اُس کے خلاف قتل، دہشت گردی اور جعلی نمبر پلیٹ گاڑی رکھنے  کا مقدمہ درج کردیا تھا تاہم پولیس قتل اور دہشت گردی کا الزام ثابت نہ کرنے کے بعد عدالت نے ملزم کو جعلی نمبر پلیٹ گاڑی رکھنے کے الزام کو ثابت ہونے پر ایک سال قید کی اور دس ہزار روپے جرمانہ کی سزاء سنادی۔ جرما نہ جمع نہ کرنے کی صورت میں ملزم مزید ایک ماہ جیل میں رہیں گے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -