قصبہ کالا: ریلوے سٹیشن خستہ حالی کاشکار‘ کوارٹرز پر نشئیوں کا قبضہ 

قصبہ کالا: ریلوے سٹیشن خستہ حالی کاشکار‘ کوارٹرز پر نشئیوں کا قبضہ 

  

 قصبہ کالا(نمائندہ پاکستان)ریلوے انتظامیہ کی عدم توجہی سے 1965 میں تعمیر ہونے والے ریلوے اسٹیشن خستہ حالی کا شکارہوگیا‘ تفصیل کے مطابق شادن لُنڈ اور(بقیہ نمبر58صفحہ 7پر)

 تونسہ شریف کے عوام کو ریلوے کی سفری سہولیات کے لیے 1965میں ریلوے اسٹیشن کی عمارت تعمیر کی گئی تھی جوکہ فن کا نمونہ تھی مگر ریلوے انتظامیہ کی عدم توجہی اور مبینہ غفلت کی وجہ سے عمارت ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے اور رات کی تاریکی میں لائٹ کا مناسب انتظام نہ ہونے سے ہر طرف اندھیرا چھایا ہوتا ہے اور ریلوے ملازمین کی رہائش کے لیے کوارٹرز بنائے گئے تھے مگر تمام کوارٹر بھوت بنگلے کا منظر پیش کر رہے ہیں کوارٹر کی چھتوں سے قیمتی گارڈر،ٹی آرز کھڑکیاں اور دروازے تک غائب ہیں جن میں  جرائم پیشہ افراد اور نشئیوں نے ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں جبکہ ذرائع کے مطابق ریلوے اسٹیشن کی عمارت کی تعمیر کے لیے فنڈز بھی مہیا کیا جاتا ہے جبکہ شہریوں کی سفری سہولیات کے لئے چلتن اور خوشحال ایکسپریس کا سٹاپ  تھا مگر سٹاپ ختم ہونے سے اب عوام اس سہولت سے بھی محروم ہیں سیاسی، سماجی اور شہریوں نے ریلوے انتظامیہ اور وزیر ریلوے سے اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے۔

خستہ حالی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -