امریکی انتخابات، وہ صدارتی امیدوار جس نے شکست تسلیم کرلی

امریکی انتخابات، وہ صدارتی امیدوار جس نے شکست تسلیم کرلی
امریکی انتخابات، وہ صدارتی امیدوار جس نے شکست تسلیم کرلی
کیپشن:    سورس:   twitter/kanyewest

  

واشنگٹن (ویب ڈیسک)امریکہ کے 46 ویں صدر کے انتخاب کے لیے انتخابی میدان میں اترنے والے امریکی ریپر و گلوکار 43 سالہ کانیے ویسٹ نے انتخابات میں اپنی شکست کو تسلیم کرتے ہوئے اگلے انتخابات میں پھر سے میدان میں اترنے کا عندیہ دے دیا، کانیے ویسٹ نے بطور آزاد امیدوار صدارتی انتخابات میں حصہ لیا تھا اور وہ امریکا کی 50 میں سے صرف 12 ریاستوں میں ہی ووٹ لینے کے اہل بنے تھے۔

ڈان نیوز کے مطابق کانیے ویسٹ نے جولائی 2020 میں صدارتی انتخابات لڑنے کا اعلان کرکے سب کو حیران کردیا تھا، تین نومبر کو ہونے والی پولنگ میں خود ہی ووٹ دیا تھا اور انہوں نے ووٹ کاسٹ کرنے کی تصاویر اور ویڈیوز بھی جاری کی تھیں تاہم کانیے ویسٹ انتخابات میں نہ تو زیادہ عوام ووٹ حاصل کر پائے اور نہ ہی انہیں کوئی الیکٹورل کالج کا ووٹ ملا۔

شوبز ویب سائٹ ڈیڈ لائن کے مطابق کانیے ویسٹ نے ریاست آرکنساس، کولاراڈو، لووا، ایڈاہو، کینٹکی، لوزیانا، منیسوٹا، اوکلاہاما، ٹینیسی، مسیسپی، اٹاہ اور ورموٹ سے مجموعی طور پر 60 ہزار ووٹ حاصل کیے، وہ  مذکورہ 12 ریاستوں میں سے کسی بھی جگہ ایک فیصد ووٹ حاصل کرنے میں بھی ناکام رہے۔شوبز ویب سائٹ ولچر کے مطابق کانیے ویسٹ نے 4 نومبر کی رات کو ہی صدارتی انتخابات میں اپنی شکست تسلیم کرتے ہوئے ٹوئٹ کی تھی، تاہم جلد ہی انہوں نے شکست کی ٹوئٹ کو ڈیلیٹ کردیا۔

اس ٹوئٹ کو ڈیلیٹ کرکے اس کی جگہ دوسری ٹوئٹ کی جس میں انہوں نے اپنی تصویر کے ساتھ 2024 لکھا، جس کا مقصد یہ تھا کہ وہ آئندہ صدارتی انتخابات میں بھی حصہ لیں گے۔

مزید :

تفریح -