مسئلہ کشمیر در اصل بر صغیر کی نامکمل تقسیم کا ہی نتیجہ ہے ٗ ڈاکٹر محمد قاسم

مسئلہ کشمیر در اصل بر صغیر کی نامکمل تقسیم کا ہی نتیجہ ہے ٗ ڈاکٹر محمد قاسم

سری نگر ( اے این این ) مسلم دینی محاذ کے امیر ڈاکٹرمحمد قاسم نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر در اصل بر صغیر کی نامکمل تقسیم کا ہی نتیجہ ہے۔ایک بیان میں ڈاکٹر قاسم فکتو نے کہاکہ پاکستان کی طرف سے اقوام متحدہ میں جونا گڈھ اور حیدر آباد مسلوں کی پیروی مسلسل اور موثر طریقہ سے نہ کرنے کی وجہ سے کشمیر کے متعلق بھارتی ناجائز موقف کی پوری طرح قلعی نہیں کھولی جاسکتی ہے چونکہ تقسیم برصغیر کیلئے طے پائے اصولوں کی رو سے کشمیر کو اسی طرح پاکستان کا حصہ ہونا چاہئے تھا۔ انہوں نے کہاکہ ہم حکومت پاکستان اور حریت پسند قیادت سے ملتمس ہیں کہ وہ مسئلہ کشمیر کو اس کے تاریخی پس منظر میں اجاگر کرتے وقت جو ناگڑھ اور حیدر آباد پر بھی بات کریں کیونکہ اس سے ان لوگوں کو جو مسئلہ کشمیر کے متعلق گمراہ کئے گئے ہیں تک مسئلہ کشمیر کے تاریخی حقائق پہنچانا ممکن ہوسکتا ہے۔

اور ساتھ ہی نئی نسل پر یہ بات واضح ہوجائے گی کہ مسئلہ کشمیر در اصل بر صغیر کی نامکمل تقسیم کا ہی نتیجہ ہے۔ حکومت پاکستان کو کشمیرکے ساتھ ساتھ اقوام متحدہ میں جونا گڑھ اور حیدر آباد کا مسئلہ بھی اٹھائیں دونوں ریاستوں کے متعلق حکومت پاکستان اور نظام حیدر آباد نے اقوام متحدہ میں بھارتی جارحیت کیخلاف درخواستیں دی ہیں جو آج وہاں زیر التواہیں ۔ جونا گڑھ اور حیدرآبادکو بھارتی جغرافیائی ہیت اور بھارتی ہندو رتہذیب میں ضم کرنے کے بعد بھارتی حکمران کشمیر کو بھارت کی جغرافیہ اور ہندو تہذیب میں ضم کرنا چاہتے ہیں۔

مزید : عالمی منظر