گوٹھوں کی لیز روکنا عوام کے ساتھ مذاق ہے ،غنویٰ بھٹو

گوٹھوں کی لیز روکنا عوام کے ساتھ مذاق ہے ،غنویٰ بھٹو

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان پیپلز پارٹی ( شہید بھٹو ) کی چیئرپرسن محترمہ غنویٰ بھٹونے بھٹائی آباد ، راشدی گوٹھ ، بلاول شاہ نورانی گوٹھ ، عبداﷲ شاہ غازی گوٹھ ، شاہنواز شر گھوٹ ، لاسی گوٹھ ، سکھیو گوٹھ ، ایوب گوٹھ ، نورخان برفت گوٹھ خادم حسین سندھی گوٹھ ، رند گوٹھ ، سید گوٹھ ، عبدالکریم ہنگورو گوٹھ ، چھٹو گبول گوٹھ سمیت 70 گوٹھوں کی لیز رد کرنے کے صوبائی حکومت کے فیصلے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت سندھ کوئی بھی کام قانونی طریقے سے سرانجام دینے کے بجائے حکمنامہ جاری کردیتی ہے جس کی وجہ سے عوام کو مشکلات و مصائب کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔سترکلفٹن سے آج جاری ہونے والے اپنے ایک بیان میں محترمہ غنویٰ بھٹو نے کہا کتنی ستم ظریفی ہے کہ سالہا سال اپنے گھروں میں رہنے والے افراد کو آج تک مالکانہ حقوق نہیں دیئے جارہے جبکہ ملکی اور غیر ملکی بلڈر ز اور مختلف ملکی و غیر ملکی شخصیات کو راتوں رات کئی ایکڑ زمین الاٹ کر دی جاتی ہے جو عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق اور وسائل کی لوٹ مار کے مترادف ہے ۔ محترمہ غنویٰ بھٹو نے کراچی سمیت تمام شہروں کی کچی آبادیوں میں رہنے والے شہریوں کوفی الفور اپنے گھروں کے مالکانہ حقوق دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کچی آبادیوں اور گوٹھوں کے رہنے والے عوام پرزور دیاہے کہ وہ میدان عمل میں آئیں اور اپنے بنیادی حقوق کی حاصلات کیلئے حکومت کے خلاف تحریک شروع کریں پاکستان پیپلز پارٹی (شہید بھٹو ) ماضی کے طرح آج بھی عوام کو جدوجہد میں تنہا نہیں چھوڑے گی ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر