جنرل راحیل شریف کا داعش کی اطاعت کرنے کے حوالے سے بیان غیر ملکی خفیہ ایجنسیوں اور سفارتخانوں کو وارننگ ہے: سابق جرنیل

جنرل راحیل شریف کا داعش کی اطاعت کرنے کے حوالے سے بیان غیر ملکی خفیہ ایجنسیوں ...
جنرل راحیل شریف کا داعش کی اطاعت کرنے کے حوالے سے بیان غیر ملکی خفیہ ایجنسیوں اور سفارتخانوں کو وارننگ ہے: سابق جرنیل

  

لاہور (ویب ڈیسک) پاک فوج کے سابق جرنیلوں اور دفاعی تجزیہ نگاروں نے جنرل راحیل شریف کی جانب سے اسلام آباد میں بعض لوگوں کی طرف سے دہشت گرد تنظیم داعش کی اطلاعت کرنے کے حوالے سے بیان کو ملک میں سرگرم غیر ملکی خفیہ ایجنسیوں کے ایجنٹوں اور سفارتخانوں کی مشکوک سرگرمیوں کی جانب اشارہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ ملک دشمنوں اور ملکی مفادات کے خلاف کام کرنے والوں کا ملک سے ہمیشہ کے لئے خاتمہ کردیا جائے۔ مقامی اخبار جنگ سے گفتگو کرتے ہوئے لیفٹیننٹ جنرل (ر) محمد منشاءنے کہا کہ لندن میں کئے جانے والے خطاب میں جنرل راحیل شریف نے پاکستان کے مفاد کے خلاف کام کرنے والے سفارتخانوں اور ان خفیہ ایجنسیوں کی جانب اشارہ کیا ہے جو بعض مفاد پرست پاکستانیوں کے ساتھ ملکر پاکستان کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں کیونکہ بڑی قوتوں کی ہمیشہ سے یہ کوشش رہی ہے کہ وہ پاکستان کو اندرونی طور رپ کمزور کریں گے مگر ان کی یہ سازش ناکام نہیں ہورہی ہے۔ لیفٹیننٹ جنرل (ر) راحت لطیف نے کہا کہ غیر ملکی خفیہ ایجنسیاں نائن الیون کے بعد سے پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کیلئے سرگرم عمل ہیں اور انہوں نے مقامی مفاد پرست ایجنٹوں کے ساتھ مل کر اپنی سرگرمیاں جاری رکھی ہوئی ہیں جنرل راحیل شریف کا اشارہ اور وارننگ انہیں کو ہے کیونکہ اس وقت آپریشن ضرب عضب کامیابی کے ساتھ اختتام پذیر ہونے والا ہے۔

مزید : لاہور