بحری جہازوں کو توڑ کر خام مال حاسل کرنیوالا پاکستا ن تیسرا بڑا ملک

بحری جہازوں کو توڑ کر خام مال حاسل کرنیوالا پاکستا ن تیسرا بڑا ملک

  

اسلام آباد (اے پی پی) گذشتہ سال 2017ء کے دوران بحری جہازوں کو توڑ کر خام مال حاصل کرنے کے حوالے پاکستان تیسرا بڑا ملک رہا ہے اور دوران سال قومی شپ بریکنگ کی صنعت سے بحری جہازوں کو توڑ کر 3.459 ملین ٹن خام مال حاصل کیا گیا۔ یونائیٹڈ نیشنز کانفرنس آن ٹریڈ اینڈ ڈویلپمنٹ (یو این سی ٹی اے ڈی) کی رپورٹ کے مطابق سال 2017ء کے دوران بھارت میں شپ بریکنگ کی صنعت سے 6.323 ملین ٹن جبکہ بنگلہ دیش سے 6.260 ملین ٹن خام مال حاصل ہوا تھا۔ اس طرح پاکستان تیسرا بڑا ملک ہے جہاں پر شپ بریکنگ کی صنعت سے 3.459 ملین ٹن خام مال حاصل ہوا جبکہ چین میں 3.445 ملین ٹن وزنی بحری جہازوں کی بریکنگ کی گئی۔ رپورٹ کے مطابق بحری جہازوں کی تیاری کے حوالے سے چین کا پہلا نمبر ہے جہاں ہر سال 90 فیصد بحری جہاز تیار کئے جاتے ہیں جبکہ پرانے سمندری جہازوں کو توڑنے ا 79 فیصد کام جنوبی ایشیا میں ہوتا ہے۔ یو این سی ٹی اے ڈی کی رپورٹ کے مطابق سال 2017ء کے دوران دنیا بھر میں 42 ملین ٹن وزنی بحری جہاز تیار کئے گئے جبکہ 22.916 ملین ٹن کے وزنی پرانے بحری جہازوں کو توڑا گیا۔

مزید :

کامرس -