توہین رسالت ﷺ کیس، سزائے موت کا سامنا کرنے والی مسیحی خاتون آسیہ بی بی کی اپیل سماعت کیلئے مقرر

توہین رسالت ﷺ کیس، سزائے موت کا سامنا کرنے والی مسیحی خاتون آسیہ بی بی کی ...
توہین رسالت ﷺ کیس، سزائے موت کا سامنا کرنے والی مسیحی خاتون آسیہ بی بی کی اپیل سماعت کیلئے مقرر

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سپریم کورٹ نے توہین رسالت ﷺ کے الزام میں سزائے موت کا سامنا کرنے والی مسیحی خاتون آسیہ بی بی کی اپیل سماعت کیلئے مقرر کر دی ہے۔

توہین رسالت ﷺ کے الزام میں سزائے موت کا سامنا کرنے والے آسیہ بی بی کی سزا کے خلاف اپیل سماعت کے لیے مقرر کردی گئی ہے، چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا تین رکنی بنچ پیر 8 اکتوبر کو درخواست کی سماعت کرے گا۔سپریم کورٹ نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اور دیگر کو نوٹس جاری کر دئیے ہیں۔

خیال رہے کہ ٹرائل کورٹ نے آسیہ بی بی کو توہین رسالت ﷺ کا جرم ثابت ہونے پر سزائے موت سنائی تھی۔ ہائیکورٹ نے بھی آسیہ بی بی کی موت کی سزا برقرار رکھنے کا فیصلہ سنایا تھا۔ آسیہ بی بی نے موت کی سزا کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کر رکھا ہے۔ سپریم کورٹ میں آسیہ بی بی کی اپیل 2015 سے زیر سماعت ہے۔

یاد رہے کہ جس وقت آسیہ بی بی پر توہین رسالت ﷺ کا الزام لگا تھا اس وقت کے گورنر پنجاب سلمان تاثیر نے خاتون کی کھل کر حمایت کی تھی اور بعض متنازعہ بیانات بھی دیے تھے جو بعد ازاں ان کی اپنے ہی محافظ ممتاز قادری کے ہاتھوں قتل کی وجہ بنے ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -جرم و انصاف -