لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والا مجرم، جیسے ہی عدالت نے فرد جرم لگائی ایسا کام کردیا جس کی کسی کو توقع نہ تھی، ہر طرف افراتفری پھیل گئی کیونکہ۔۔۔

لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والا مجرم، جیسے ہی عدالت نے فرد جرم لگائی ...
لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والا مجرم، جیسے ہی عدالت نے فرد جرم لگائی ایسا کام کردیا جس کی کسی کو توقع نہ تھی، ہر طرف افراتفری پھیل گئی کیونکہ۔۔۔

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی شہر ورسیسٹر میں ایک نوجوان نے لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ جب پولیس نے اسے عدالت میں پیش کیا اور اس کے خلاف فردجرم عائد کی گئی تو اس نے ایسا کام کر دیا کہ ہر طرف افراتفری مچ گئی۔ میل آن لائن کے مطابق 20سالہ بریڈلے ٹاﺅٹ نامی اس نوجوان نے 16سالہ لڑکی کودسمبر 2016ءمیں جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ جب ورسیسٹر کراﺅن کورٹ میں اس پر فرد جرم عائد کی گئی تو اس نے کٹہرے سے باہر چھلانگ لگائی اور عدالت سے بھاگ گیا۔ پولیس کی اس کو روکنے کی تمام تر کوشش کے باوجود وہ آن کی آن میں نظروں سے اوجھل ہو گیا۔اس کی اس حرکت پر جج نکولس کارٹ رائٹ کا کہنا تھا کہ ”میں نے زندگی میں ایسا واقعہ پہلے کبھی نہیں دیکھا۔“ جج نے سکیورٹی عملے پر بھی شدید برہمی کا اظہار کیا جو بریڈلے کو روکنے میں ناکام رہا تھا۔

رپورٹ کے مطابق بریڈلے تاحال مفرور ہے اور کئی ہفتے گزرجانے کے باوجود پولیس اس کا سراغ نہیں لگا سکی اور اسے اس کی غیرموجودگی میں ہی ساڑھے 7سال قید کی سزا سنا دی گئی ہے۔ ورسیسٹر کے سپرنٹنڈنٹ پاﺅل موکسلے کا کہنا ہے کہ ”ہم ہر جگہ بریڈلے کی تلاش جاری رکھے ہوئے ہیں، وہ 5فٹ 8انچ قد کا سفید فام، بھورے بالوں والا نوجوان ہے۔ ہم شہریوں کو ہدایت کرتے ہیں کہ جو کوئی اسے دیکھے فوری طور پر پولیس کو مطلع کرے۔جس کسی نے جان بوجھ کر چھپنے میں اس کی معاونت کی اسے گرفتار کر لیا جائے گا۔ “

مزید :

ڈیلی بائیٹس -برطانیہ -