’میں نے کریم ٹیکسی منگوائی، گاڑی آئی تو ڈرائیور ایک خاتون تھی، وہ مجھ سے کہنے لگی تمہاری اب تک شادی۔۔۔‘ خاتون ٹیکسی ڈرائیور نے پاکستانی لڑکی کے ساتھ ایسا کام کردیا کہ جان کر آپ کہیں اس سے تو مرد ڈرائیور ہی اچھے

’میں نے کریم ٹیکسی منگوائی، گاڑی آئی تو ڈرائیور ایک خاتون تھی، وہ مجھ سے ...
’میں نے کریم ٹیکسی منگوائی، گاڑی آئی تو ڈرائیور ایک خاتون تھی، وہ مجھ سے کہنے لگی تمہاری اب تک شادی۔۔۔‘ خاتون ٹیکسی ڈرائیور نے پاکستانی لڑکی کے ساتھ ایسا کام کردیا کہ جان کر آپ کہیں اس سے تو مرد ڈرائیور ہی اچھے

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)آن لائن ٹیکسی سروس جہاں ایک بڑی سہولت ہے وہیں کچھ بدقماش ڈرائیور خواتین صارفین کے لئے درد سر بھی ثابت ہو رہے ہیں۔ ایسے میں اکثر خواتین سوچتی ہیں کہ اگر اوبر اور کریم جیسی کمپنیوں کے لئے خواتین بھی ڈرائیونگ کریں تو کتنا اچھا ہو۔ اتفاق سے ایک لڑکی کو حال ہی میں یہ تجربہ ہوا کہ کریم کی ٹیکسی منگوائی تو ڈرائیور خاتون تھی، مگر یہ تجربہ کیسا رہا، یہ بات جاننے سے تعلق رکھتی ہے۔

ویب سائٹ Parhloکے مطابق اس لڑکی نے کریم کی خاتون کیپٹن، یعنی کریم کمپنی کے لئے گاڑی چلانے والی خاتون ڈرائیور، کے ساتھ سفر کا احوال کچھ یوں بیان کیا ہے:

کل میں ایک سہیلی کی طرف گئی ہوئی تھی جہاں سے واپسی کے لئے کریم ٹیکسی کی بکنگ کروائی۔ مجھے ڈرائیو رکا پروفائل دیکھ کر خوشی ہوئی کیونکہ یہ ایک خاتون تھی اور اس وقت رات کے 9 بج رہے تھے۔ اس کے پہنچتے ہی میں گاڑی میں بیٹھی اور ہمارا سفر شروع ہوگیا۔

میں ایک خوش مزاج انسان ہوں اور اکثر بات شروع کرنے میں پہل کرتی ہوں لیکن اس دن میں تھکی ہوئی تھی۔ خاتون ڈرائیور نے میرے بارے میں پوچھنا شروع کردیا اور اپنی کہانیاں بھی سنانی شروع کردیں۔ یہ بہت بے تکی کہانیاں تھیں، میں بس ہوں ہاں کرکے بات کو ٹال رہی تھی۔

پھر وہ کہنے لگی اب تک شادی کیوں نہیں کی؟ پڑھی لکھی ہو اس لئے نخرے کرتی ہوگی؟ ابھی سے اتنی عمر کی لگتی ہو، اب تو کسی طلاق یافتہ یا بڑی عمر کی آدمی سے ہوگی شادی۔ رنگ بھی تو سانولا ہے۔ جاب کرتی ہوگی تو گھر کے کام بھی نہیں آتے ہوں گے۔ وقت ضائع کردیا ہوگا سب۔

میں یہ سوچ رہی تھی کہ اس خاتون کو کیا مسئلہ ہے۔ میں نے کہا کہ یہ میرے ذاتی مسئلے ہیں جن کے بارے میں آپ سے بات نہیں کرنا چاہتی لیکن وہ باز نہیں آئی۔ اس نے مجھ سے اس طرح کے سوالات بھی پوچھے کہ گھر میں کتنے لوگ ہیں او رکتنے مرلے کا گھر ہے تمہارا۔ مختصر یہ کہ میں نے ایک اجنبی خاتون سے بے عزت ہونے کے پیسے ادا کئے اور انتہائی برے موڈ میں گھر پہنچی۔ مجھے سمجھ نہیں آتی کہ خواتین دوسری خواتین کو تکلیف دینا کب چھوڑیں گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -علاقائی -سندھ -کراچی -