نوشہرہ، جمعیت کی 27اکتوبر کو آزادی مارچ کی تیاریاں آخری مراحل میں

نوشہرہ، جمعیت کی 27اکتوبر کو آزادی مارچ کی تیاریاں آخری مراحل میں

  

نوشہرہ(بیورورپورٹ)جمعیت علماء اسلام ضلع نوشہرہ نے 27 اکتوبر کے آزادی مارچ کی تیاریاں آخری مراحل میں ضلع بھر کے طوفانی دورے مکمل 500 سے زائد رضاکار تیار کسی نے بھی ہمارے پرامن احتجاج اور قافلے کو روکنے کی کوشش کی تو اینٹ کا جواب پتھر سے دیناجانتے ہیں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان ہوش کے ناخن لے وہ مارشل لادور کے وزیراعلیٰ نہیں اور نہ ایڈمنسٹریٹر ہے وہ جمہوری دورکے وزیراعلیٰ ہے جمہوری اور آئینی انداز میں بات کریں ان خیالات کااظہار جمعیت علماء اسلام (ف) ضلع نوشہرہ کے امیر قاری محمداسلم، جنرل سیکرٹری مفتی حاکم علی حقانی، صوبائی شوریٰ کے رکن الحاج پرویز خٹک ون قاری ریاض اللہ، قاری ظہوراحمد، سالار نعمت اللہ، عاصم خان علی زئی، فضل اکبرباچا، ناصرخان یوسفزئی اور دیگر نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ قائد جمعیت مولانا فضل الرحمن نے 27 اکتوبر آزادی مارچ کیلئے تاریخ مقررکردی ہے اور ضلع نوشہرہ سے ایک لاکھ سے زائد افراد اس مارچ میں شرکت کریں گے کوئی روک سکتا ہے تو روک لے ضلعی انتظامیہ اور سرکاری اہلکار جمعیت علماء اسلام کے راستے میں روڑے اٹکھانے کی کوشش نہ کریں ہم شہادت کی نیت سے نکلے ہیں اس وقت تک اسلام آباد سے واپس نہیں آئیں گے جب تک یہودی ایجنٹوں کی حکومت کا خاتمہ نہیں ہوتا چیڑوں مت چیڑے جاؤں گے کی پالیسی پر یقین رکھتے ہیں لیکن ہمارا احتجاج پرامن ہوگا اور پرامن احتجاج ہمارا آئینی اور جمہوری حق ہے اس سے ہمیں کوئی محروم نہیں کرسکتا انہوں نے کہا کہ کہاں گئے وہ کنٹینر فراہم کرنے کے وعدے کنٹینر فراہمی تو دور کنار آزادی مارچ کی تاریخ کے تعین کے اعلان سے عمران خان اور ان کے حواری بوکھلاہٹ کے شکار ہوگئے ہیں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان اور وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی انتہائی ذمہ دارعہدوں پر ہونے کے باوجود غیرذمہ دارانہ اور غیرسنجیدہ بیانات دے کر کیا تاثر دینا چاہتے ہیں انہوں نے کہا کہ عمرانی حکومت میں ملک کی معیشت، صنعت تباہ و برباد ہوچکا ہے وطن عزیز کی سا لمیت کو خطرہ ہے جس کا جیتا جاگتا ثبوت لاہور میں ڈانس کلب کی افتتاح ہے انہوں نے کہا کہ عوام ملک میں آئین کی پاسداری، یہودی لابی کے خلاف اور ملک کی سرحداتی ونظریاتی سا لمیت کیلئے متحد ہوکر اپنا کردار اد اکریں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -