نجکاری کی گئی تواپوزیشن واپڈاکیساتھ ہوگی، اکرم خان درانی

نجکاری کی گئی تواپوزیشن واپڈاکیساتھ ہوگی، اکرم خان درانی

  

پشاور(نیوز رپورٹر)خیبر پختونخوا اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی سپیکر محمود جان کی صدارت میں شروع ہوا،اپوزیشن لیڈر اکرم خان درانی نے نکتہ اعتراض پر کہا کہ بنوں میں گذشتہ روز انتہائی شدید بارش ہوئی ہے ہر طرف پانی کھڑا ہے حکومت اس کا نوٹس لے انہوں نے کہا کہ واپڈا یونین نجکاری کیخلاف احتجاج کی تیاری کررہی ہے اگر حکومت واقعی نجکاری کررہی ہے تو ساری اپوزیشن واپڈا یونین کے ساتھ ہوگی انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ میں اپنے صوبے میں لانگ کرنے نہیں دونگا حالانکہ ہم نے پورے ملک میں پندرہ ملین مارچ کئے ایک شیشہ نہیں تھوڑا،حالانکہ ہم تو وزیر اعظم کے اعلان کے مطابق کنٹینر کی فراہمی کی توقع کرہے ہیں انہوں نے کہا کہ ڈاکٹروں پر لاٹھیاں برسائی گئیں کل واپڈا والوں پر برسائیں گے اور آج ہمیں دھمکیاں دے رہے ہیں انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی اور وزیر اطلاعات کے بیانات مزید بھی سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ ہمیں ڈرانے اور دھمکانے کی باتیں نہ کی جائیں انہوں نے کہا کہ 27 اکتوبر کو آزادی مارچ ہوگا،سینئر وزیر عاطف خان نے کہا کہ ہر کسی کو احتجاج کرنے اور اپنی بات کہنے کا حق ہے تاہم انہوں نے کہا کہ اگر زبردستی کسی گاڑی کو روکا جائے گا یا دکان بند کیا جائے گا تو قانون حرکت میں آئے گا وقفہ سوالات میں ارکان اسمبلی صاحبزادہ ثناء اللہ،نگہت اورکزئی،سردار حسین بابک،میاں نثار گل،عنایت اللہ خان،خوشدل خان ایڈوکیٹ،شگفتہ ملک،صلاح الدین اور ثمر بلور کے سوالات اپوزیشن کے احتجاج کے دوران لیپس ہوگئے اپوزیشن ارکان ثمر بلور اور شگفتہ ملک کے توجہ دلاؤ نوٹس بھی اپوزیشن کے احتجاج کے دوران لیپس ہوگئے اپوزیشن کے احتجاج اور شور شرابہ کے دوران صوبائی وزیر قانون وپارلیمانی امور سلطان محمد خان نے خیبر پختونخوا کوڈ آف سول پروسیجر ترمیمی بل 2019 فوری پر ایوان میں زیر غور اور منظور کرنے کی تحاریک پیش کیں ایوان نے بل کی منظوری دے دی حکومتی رکن حاجی فضل الہٰی نے اپوزیشن کے کردار کو تنقید کا نشانہ بتاتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن ارکان کو اپنے ایجنڈے اور حلقوں کے عوام کی فکر نہیں صرف اسلام آباد کی فکر ہے ڈپٹی سپیکر محمود جان نے اجلاس بدھ کی دوپہر دو بجے تک کیلئے ملتوی کردیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -