ڈاﺅ یونیورسٹی میں چھٹی بین الاقوامی ڈینٹل کانفرنس کے افتتاح

ڈاﺅ یونیورسٹی میں چھٹی بین الاقوامی ڈینٹل کانفرنس کے افتتاح

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)ڈاﺅ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کی پرو وائس چانسلر پروفیسر زرناز واحد نے کہا ہے کہ منہ کی صحت صرف دانتوں کی صحت نہیں بلکہ درحقیقت پورے جسم کی صحت کا انحصار اس پر ہے، اس لیے اس شعبے پر خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے، کیونکہ صحت کے اس بنیادی شعبے میں جدید تعلیم و تربیت کے حامل افراد کی تعداد کم اور اتائیوں کی تعداد زیادہ ہے، ڈاﺅ یونیورسٹی نے اس شعبے میں تربیت یا فتہ افراد کی تعداد بڑھانے پر خصوصی توجہ مرکوز کر رکھی ہے، اس مقصد کے لیے تین ڈینٹل انسٹیٹیوٹ قائم کئے ہوئے ہیں، یہ بات انہوں نے ڈاﺅ میڈیکل کالج کے معین آڈیٹوریم میں منعقد ہونے والی چھٹی بین الاقوامی ڈینٹل کانفرنس کے افتتاحی سیشن سے بحیثیت مہمانِ خصوصٰ خطاب کرتے ہوئے کہی، تین روزہ کانفرنس کا اہتمام پاکستان ایسوسی ایشن فار ڈینٹل ریسرچ نے ڈاﺅ یونیورسٹی کے اشتراک سے آراگ اور معین آڈیٹوریم میں کیا گیا، پہلے دن کے مختلف سیشنز کے پروفیسر عنایت اللہ پڈھیار، پروفیسر حنا ظفرراجہ پریزیڈینٹ ایلکٹ پی اے ڈی آر، پروفیسر شازیہ اکبر پریزیڈینٹ پی اے ڈی آر ،پروفیسر شاہ جہاں کٹپر ڈین ڈٰینٹسٹری،پروفیسر سہیل ظفر راجہ، پروفیسر جویریہ اظہر،پرنسپل ڈاﺅ انٹرنینشنل ڈینٹل کالج پروفیسر اشعر ، ڈاکٹر مارون سمیت دیگر نے خطاب کیا، پروفیسر زرناز واحدنے مزید کہا کہ معاشرے کی ضروریات کو مدِ نظر رکھتے ، ریسرش کی جانی چاہیے، ہم اس وقت بالکل صحیح سمت میں کام کر رہے ہیں، ہمیں قواعد کے مطابق کام کرنا ہوگا، جس سے ہمیں اس ملک میں بنچ مارک بنا سکیں گے، انہوں نے ڈاﺅ یونیورسٹی میں کانفرنس کے انعقاد پر مبارک باد پیش کی، اور کہا کہ انہیں یقین ہے کہ یہ کانفرنس طلبہ اور نئے آنے والوں کے لیے کافی سود مند ثابت ہوگی، اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سینئر پروفیسر تمغہ امتیاز عنایت اللہ پڈھیار نے کہا کہ میں نے صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی کے ساتھ ڈینٹل جرنل پر کام 1982سے شروع کیا، شروع میں صرف ایک ڈینٹل لیٹر ہوا کرتا تھا، مگر ہماری کاوشوں کی بدولت 1985میں جرنل اجراءشروع ہوا۔باآخر میں نے پرائیویٹ جرنل شروع کیا، تاکہ آزادنہ طورپر اس میں اشاعتیں شامل کی جاسکیں، اور آج بھی ڈینٹل پروفیشنل لوگوں کے لیے اہمیت کا حامل ہے،پروفیسر شازیہ اکبر نے کہااس کانفرنس کا کراچی میں کرانے کا مقصد دانتوں کے صحت کے مسائل کو اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ طلبہ کو معلومات اور جدید ریسرچ ، طریقہ کار اور حاضر جیلنجز سے روشناس کرانا ہے، سب سے زیادہ مسائل کا گڑھ کراچی ہے، ڈاﺅ یونیورسٹی اس کانفرنس کی دوسری بار میزبانی کر رہی ہے، جو یہاں کے طلبہ کے لیے کافی مدد گار ثابت ہوگی۔ پروفیسر شاہ جہاں کٹپر ڈین ڈٰینٹسٹری نے اس موقع پر کہا کہ ڈاﺅ یونیورسٹی نے وائس چانسلر کی مدد سے اس کانفرنس کو یقینی بنایا، جس کا مقصد دنیا بھر میں ہونے والی ریسرچ اپنے نوجوان ڈاکٹروں کے سامنے رکھنا اور ریسرچ کے مواقع فراہم کرنا ہے، انہوں نے بتایا کہ پاکستان میں صرف دو ریجسٹرڈ ڈینٹل جرنل ہیں، جن پر کام کرنے اور ان کی تعداد بڑھانے کی ضرورت ہے، انہوں نے بتایا کہ پاکستان میں پان ، گٹکے اور تمباکو نوشی کی وجہ سے منہ کی امراض میں بے پنہاں اضافہ ہوا ہے،ایک محتاط اندازے کے مطابق پاکستان میں سب سے زیادہ اورل کینسر کی وجہ بھی یہی ہے، پاکستان میں کراچی سر فہرست ہے، ، سال بھر میں اورل کینسر کی تعداد بریسٹ کینسر کے زائد ہے، جو اموات کا سبب بھی من رہی ہے

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -