کراچی،کڈنی ہل پارک میں پودے لگانے کے مرحلے کا آغاز ہوگیا

      کراچی،کڈنی ہل پارک میں پودے لگانے کے مرحلے کا آغاز ہوگیا

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) کڈنی ہل پارک میں جغرافیائی مطالعہ اور لینڈاسکیپنگ کے کاموں کو مکمل کرنے کے بعد پودے اور درخت لگانے کے مرحلے کا آغاز ہوچکا ہے، آئندہ دو ہفتوں میں دس ہزار سے زائد درخت لگا دیئے جائیں گے جبکہ چند ماہ میں یہاں تقریباً ایک لاکھ درخت لگائے جائیں گے، توقع ہے کہ پارک کو جلد ہی عوام کیلئے کھول دیا جائے گا، تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کی ہدایت کی روشنی میں بلدیہ عظمیٰ کراچی نے کے ڈی اے اسکیم نمبر 32 کڈنی ہِل پارک (احمد علی پارک) کو عوام کے لئے ایک خوبصورت پارک کی صورت میں مکمل تفریح گاہ بنانے کیلئے یہاں ہونے والے مختلف کاموں کو مکمل کرلیا ہے، پارک میں بے ہنگم طور پر جا بجا پھیلی ہوئی جھاڑیوں کو صاف کرکے ہموار راستے بنادیئے گئے ہیں جبکہ بھاری مشینری کے استعمال کے بعد راستوں میں موجود پتھریلے اور نوک دار پتھروں او رکوڑا کرکٹ کو ٹھکانے لگا دیا گیا ہے، میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن روزانہ کی بنیاد پر کڈنی ہل پارک میں ہونے والے مختلف کاموں کا جائزہ لے رہے ہیں اور تمام کاموں کو اپنی نگرانی میں مکمل کرارہے ہیں، انہوں نے بتایا کہ کڈنی ہل پارک میں جو پودے اور درخت لگائے جارہے ہیں ان میں گل مہر، پکر، پیپل، جنگل جلیبی، جنگل بادام، انجیر، نیم، ربر پلانٹ، گواوا، چیکو، گولر، برگد، ناریل، ببول، کھجور، آم، پومی گرانیٹ، نیبو، املی، جامن، کسٹرڈ ایپل، انگور، امل تاس، سانجنا اور کیس سیا یلو شامل ہیں، انہوں نے کہا کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی چونکہ مالی طور پر مستحکم نہیں ہے اس لئے اس بات کی کوشش کی گئی ہے کہ کڈنی ہل پارک کو اس انداز میں بنایا جائے کہ یہاں پیسوں سے زیادہ ایک وژن کے تحت کام کیا جائے تاکہ کم وقت اور انتہائی قلیل خرچ میں 62 ایکڑ پر پھیلے ہوئے اس پارک کو اصل صورت میں بحال کرکے عوام کے لئے کھولا جائے، انہوں نے کہا کہ اس پارک میں اندرونی طور پر بھی مختلف راستے بنائے گئے ہیں تاکہ یہاں آنے والے پارک کی چھوٹی بڑی پہاڑیوں (نشیب و فراز) پر باآسانی پہنچ سکیں اور شہر کا بھر پور نظارہ کرسکیں، انہوں نے کہا کہ پارک میں داخلے کے لئے چار مرکزی دروازے بنائے جارہے ہیں جن کی بنیاد رکھ دی گئی ہے آئندہ چند روز میں ان چاروں دروازوں پر گیٹ نمبر ایک سے لے کر گیٹ نمبر چار تک کی مارکنگ پلیٹس بھی آویزاں کردی جائیں گی تاکہ پارک میں آنے والوں کو آسانی ہوسکے، ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے کہا کہ کڈنی ہل پارک میں آنے والوں کو چھوٹی بڑی پہاڑیوں پر چلنے اور لطف اندوز ہونے کے ساتھ ساتھ بزرگوں کے لئے ہموار راستہ اور بیٹھنے کی جگہ، مختلف مقامات پر پینے کا صاف پانی، ہوا کی آمدو رفت، روشنی کا انتظام، واکنگ ٹریک، بچوں کے کھیلنے کی جگہ اور دیگر سہولیات بھی میسر ہونگی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -