خاندانی منصوبہ بندی کے حوالے سے ایم ایس ایس کا سیمینار

خاندانی منصوبہ بندی کے حوالے سے ایم ایس ایس کا سیمینار

  

کراچی (پ ر) ماری اسٹوپس سوسائٹی(MSS)نےInternational World Contraception Day کے سلسلے میں ایک سیمینار کا اہتمام کیا جس کا موضوع تھا: 'صحت مند ماں، صحت مندبچے، صحت مند پاکستان'۔اس سیمینارمیں صحت مند ماں کی اہمیت کو اجاگر کیا گیا، اگر ماں صحت مند ہوگی تو بچے بھی صحت مند ہوں گے جس کے باعث صحت مند افراد پاکستان کی ترقی میں معاون ہوں گے۔ سیمینار کے مہمانِ خصوصی سیکرٹری پاپولیشن ویلفیئر ڈپارٹمنٹ، محترم زاہد علی عباسی تھے۔سیمینارمیں خاندانی منصوبہ بندی اوربچوں میں وقفے کی ضرورت پر زور دیاگیاجو ماں اور بچے کا بنیادی حق ہے۔پینل کی معزز شخصیات میں معروف گائناکولوجسٹ اور نیشنل کمیٹی فار میٹرنل اینڈ نیونیٹل ہیلتھ(NCMNH) کی سینئر ممبر پروفیسر ڈاکٹر سعدیہ پال، فائزرکے کنٹری لیڈ پبلک افیئرز اینڈ کمیونیکیشن کے سید ناصر امام، ماری اسٹوپس سوسائٹی کی کنٹری ڈائریکٹر اسما بلال، اورفلم میکر جناب راشد سمیع شامل تھے۔پینل میں ماڈریٹر کے فرائض MSSکے ڈائریکٹراسٹریٹجی ڈاکٹرزاہر گل نے انجام دئیے۔ "زچگی کے دوران موت کی شرح میں اضافہ، ملک کی 38%سے زیادہ آبادی کاپسماندہ ہونااور بچوں کی نشوونما میں رکاوٹ جیسے مسائل کو مدنظر رکھتے ہوئے مانع حمل کے محفوظ طریقوں تک رسائی کو یقینی بناناہماری قومی ترقی کے نظرئیے کو حاصل کرنے کیلئے ضروری ہے۔"ماری اسٹوپس سوسائٹی کی کنٹری ڈائریکٹر اسما بلال نے سیمینار میں گفتگو کرتے ہوئے کہا۔ "پاکستان میں خاندانی منصوبہ بندی کی شدید ضرورت ہے۔حکومت ِ سندھ،صوبہ سندھ کے لوگوں کو مانع حمل ادویات کی دستیابی کو یقینی بنانے کیلئے بھر پور کاوشیں کررہی ہے۔لیکن نچلی سطح تک چیلنجز موجود ہیں جن میں غلط تصورات، تربیت یافتہ ہیلتھ اسٹاف کی کمی اور دیگر مسائل شامل ہیں۔ اس شعبہ میں حقیقی طور پر تبدیلی کیلئے آگہی اور مناسب کونسلنگ کے ساتھ ساتھ بنیادی اسٹیک ہولڈرز کی مشترکہ کوششوں کی ضرورت ہے"۔ ان خیالات کا اظہار جناب زاہد علی عباسی نے اپنے خطاب میں کیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -