عراق حکومت کی ویز اپروول شرط،ایجنٹس اور زائرین کے کروڑوں ڈوبنے کا خطرہ 

عراق حکومت کی ویز اپروول شرط،ایجنٹس اور زائرین کے کروڑوں ڈوبنے کا خطرہ 

  

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)ایجنٹوں اور زائرین کے کروڑوں روپے ڈوبنے کا خطرہ،عراق حکومت نے ویزاکیلئے پاکستان اور بنگلہ دیش سے آنیوالوں کیلئے اپروول کی شرط لگا دی،کفالہ سسٹم بھی ختم،حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کے چہلم کیلئے ایڈوانس ٹکٹیں اور ہوٹلز بک کروانے والے ہزاروں افراد پھنس گئے،کفالہ کے نظام کی وجہ سے عراق کا ویزا ایک دن میں لگ جاتا تھا،اپروول کی شرط کے بعد 10سے15دن لگ رہے ہیں،زائرین کی روانگی آج سے شروع ہو رہی ہے،جعفریہ حج عمرہ وزیارات نے وزیر اعظم سے مدد مانگ لی، وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری سے کردار ادا کرنے کی بھی درخواست،حکومت نے فوری مداخلت نہ کی تو بڑے مالی نقصان کیساتھ ساتھ ہزاروں زائرین چہلم میں شرکت سے محروم رہ جائیں گے،ایڈوانس ٹکٹ بنانے والوں کا کروڑوں روپے نقصان بھی ہو گا،ایجنٹوں کا بھی دیوالیہ نکل جائیگا، اس سے پہلے عمرہ ویزا 15ذو الحج سے شروع نہ ہونے کی وجہ سے عمرہ ایجنٹوں کو کروڑوں روپے کا نقصان ہو چکا ہے،جعفریہ حج و عمرہ زیارات پنجاب کے جنرل سیکرٹری سید محمد کاظم موسوی نے جعفریہ حج و عمرہ زیارات پاکستان کے مرکزی چیئرمین علامہ ڈاکٹر محمد حسین اکبر سے عراقی ویزا کے حوالے سے بھی خصوصی کردار ادا کرنے کی درخواست کرتے ہوئے کہا ہے وزارت خارجہ عراق اور کونسل جنرل عراق سے رابطہ کیا جائے تا کہ زائرین طے شدہ شیڈول کے مطابق سفر کر سکیں اور چہلم حضرت امام حسین میں بر وقت شریک ہو جائیں،کاظم موسوی نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا وقت کی کمی کی وجہ سے حالات خراب ہیں،فوری مدد کی ضرورت ہے ورنہ ہزاروں ٹکٹ جو کروڑوں روپے کی ہیں ضائع ہو جائیں گی اورہزاروں پاکستانی چہلم میں شرکت سے محروم رہ جائیں گے۔

عراق حکومت 

مزید :

صفحہ آخر -