بھارتی ہیکرز کی الیکشن کمیشن سمیت سرکاری ویب سائٹس ہیک کرنے کی کوششوں کا انکشاف

بھارتی ہیکرز کی الیکشن کمیشن سمیت سرکاری ویب سائٹس ہیک کرنے کی کوششوں کا ...

  

اسلام آباد(آئی این پی)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے اجلاس میں سینیٹر رحمان ملک نے انکشاف کیا ہے کہ بھارت کی طرف سے ہمارے آئی ٹی سسٹم خاص کر الیکشن کمیشن کو ٹارگٹ کرکے ہیک کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ کوبھارتی ہیکرز کی جانب سے روزانہ 200 سے زائد بار ہیک کرنے کی کوشش ہوتی ہے جبکہ دیگرسرکاری اداروں کی ویب سائٹس پر بھی بھارتی ہیکرز کی جانب سے حملے ہو رہے ہیں، پاکستان میں سائبر کرائم پر تو کچھ کام ہوا ہے مگر سائبر سکیورٹی پر کوئی کام نہیں ہوا۔ کمیٹی کا اجلاس چیئرپرسن سینیٹر روبینہ خالد کے زیر صدارت پارلیمینٹ ہاؤس میں منعقد ہوا،جس میں کمیٹی ارکان کے علاوہ سیکرٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی اور پی ٹی سی ایل حکام نے شرکت کی۔سینیٹر رحمان ملک نے انکشاف کیا کہ دشمن ملک بھارت کی طرف سے ہمارے آئی ٹی سسٹم خاص کر الیکشن کمیشن کو ٹارگٹ کرکے ہیک کرنے کی کوشش کی جارہی ہے اس کی روک تھام کیلئے  ہنگامی طور پر اقدامات کی ضروروت ہے۔۔چیئرپرسن کمیٹی نے کہا کہ اس وقت دنیا میں سائبر وار ہے مگر پاکستان میں اس کا نام تک نہیں۔ رحمان ملک وزارت کے حکام کی ساتھ بیٹھ جائیں اور مل کر اس پر ایک جامع پالیسی ترتیب دیں۔ سینیٹر رحمان ملک نے کہا کہ ہمارے ہاں کرپشن کا بڑا واویلا کیا جاتا ہے، اٹلی میں 20سال پہلے کرپشن عروج پر تھی مگر انہوں نے کرپشن کہ روک تھا م کیلئے پورے نظام کو ڈیجیٹل کر دیا جس کی وجہ سے کوئی بھی چاہتے ہوئے بھی کرپشن نہیں کر سکتا۔میری درخواست ہے کہ کرپشن کی روک تھام کیلئے اٹالین فریم ورک اپنایا جائے۔قبل ازیں سیکرٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی نے کمیٹی کو بتایا کہ پی ٹی سی ایل کی نجکاری2006ء میں ہوئی حکومت کے 62فیصد پی ٹی سی ایل میں شیئر ز ہیں، اتصالات کمپنی کے 26فیصد اور 12فیصد ملازمین کے شیئرز ہیں۔ کمیٹی کو بتایا گیا کہ حکومت کے واضح شیئرز ہونے کے باوجود بھی مینجمنٹ کنڑول اتصالات کمپنی کے پاس ہے اور مینجمنٹ کے تمام معاملات اور انتظامی امورکمپنی کے پاس ہیں، ملازمین کی ریٹائرمنٹ کے بعد 6ماہ تک گھر رکھ سکتے ہیں۔ بیوہ2سال اور سپیشل ولینٹری سیپریشن سکیم کے تحت بھی 2 سال تک گھر میں رہائش پذیر ہو سکتے ہیں۔جس پر کمیٹی نے سفارش کی کہ اگر کوئی دوران سروس انتقال کر جائے تو اس کی بیوہ کو ریٹائرمنٹ کی عمر تک مکان میں رہنے کی اجازت کے ساتھ ایک بچے یا بیوہ کو ملازمت فراہم کی جائے۔ پی ٹی سی ایل حکام نے کمیٹی کو آگاہ کیاکہ پی ٹی سی ایل میں ایسا سسٹم نہیں ہے البتہ پنشن کی ادائیگی کے حوالے سے کمیٹی کی سفارشات پر عملدرآمد کیا جارہا ہے۔ قائمہ کمیٹی نے پنشن اوردوران سروس انتقال کرنے والے ملازمین کی تفصیلات طلب کر لیں۔

 انکشاف

مزید :

صفحہ آخر -