وزیر اعظم کی تقریر کو تحریک میں بدلا جائے،صاحبزادہ حامد رضا

وزیر اعظم کی تقریر کو تحریک میں بدلا جائے،صاحبزادہ حامد رضا

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ وزیراعظم کی جنرل اسمبلی کی تقریر کو تحریک میں بدلا جائے۔ ایران اور سعودی عرب کی لڑائی میں پاکستان کو فریق نہیں بننا چاہئے۔ امت مسلمہ میں فرقہ واریت پھیلانے کا سب سے بڑا ذمہ دار سعودی عرب ہے۔ تنظیم المدارس کے انتخابات میں وسیع پیمانے پر بے ضابطگیاں ہو رہی ہیں۔ مفتی منیب الرحمن نے اپنے مفادات کے لئے تنظیم المدارس پر قبضہ کر رکھا ہے۔ تنظیم المدارس کو قبضہ گروپ سے آذاد کروا کر دم لیں گے۔ کشمیر میں شب ظلمت کے ڈھلنے کا وقت قریب ہے۔ بھارتی سازشوں سے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے۔حکومت تدبر اور اپوزیشن ہوش سے کام لے۔ ملک کسی انتشار اور فساد کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ جمعیت علماء ہند کی مسئلہ کشمیر پر مودی کی حمایت شرمناک ہے۔ نااہل ٹیم نے کپتان کو ہیرو سے زیرو بنا دیا ہے۔ ملک میں قومی یکجہتی کی فضا بنانا حکومت اور اپوزیشن کی مشترکہ ذمہ داری ہے۔ احتسابی عمل مشکوک اور متنازعہ ہو چکا ہے۔ اپوزیشن راہنماؤں کی گرفتاریوں سے کشمیر کاز پر پیدا ہونے والا یکجہتی کا ماحول خراب ہو رہا ہے۔ اس وقت ملک میں سیاسی عدم استحکام پیدا کرنا کشمیریوں سے غداری ہے۔ سیاسی اختلافات بھلا کر کشمیر کاز کے لئے متحد ہونے کی ضرورت ہے۔ وزیراعظم کو دورہ امریکہ سے پہلے قومی قیادت کو اعتماد میں لینا چاہئے تھا۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے سنی اتحاد کونسل کے اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ خیبر پختونخواہ میں حجاب کی پابندی کرنے کا حکم واپس لینا افسوسناک ہے۔

حامد رضا

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -