وزیر اعظم نے جنرل اسمبلی میں جراتمندانہ خطاب کیا،پیر منور شاہ

  وزیر اعظم نے جنرل اسمبلی میں جراتمندانہ خطاب کیا،پیر منور شاہ

  

لاہور (پ ر) وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں مدبرانہ، جارحانہ، ماہرانہ اور جرا ت مندانہ خطاب کیا جس سے ایک طرف تو بھارت میں صف ماتم بچھی ہوئی ہے تو دوسری طرف پورا عالم کفر لرزہ براندام ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے ایک طرف تو دیارِ کفر میں کھڑے ہو کر حقیقی معنوں میں اسلام کی سچی اور صحیح تصویر پیش کیا تو دوسری طرف تحفظ ناموس رسالت و عقیدہ ختم نبوت کا جس عمدہ طریقے سے دفاع کیا ہے اس سے ملک و قوم کے سیاسی و مذہبی غداروں کی نیندیں حرام ہو چکی ہیں‘ ان خیالات کا اظہار سجادہ نشین و جانشین حضرت امیر ملت پیر سید منور حسین شاہ جماعتی نے وزیراعظم کے نام اپنے پیغام میں کیا۔ اْن کا کہنا تھا کہ سلطان صلاح الدین ایوبی ؒ کا واضح فرمان آج بھی تاریخ کے ماتھے کا جھومر ہے کہ ”جب ملک و قوم حالت جنگ میں ہوں تو اس وقت جو ملک اور فوج کیخلاف بھونکتا ہے وہ غدارِ وطن ہے اور دْشمن سے بھی پہلے اس کو مارنا ضروری ہے“۔ ہم سمجھتے ہیں کہ وزیراعظم عمران خان نے جس طریقے سے عالمی پلیٹ فارم پر مسئلہ کشمیر کو اْجاگر کیا پچھلے ستر سالوں میں اسکی مثال نہیں ملتی اور عمران خان اسلام کی صحیح معنوں میں عکاسی کرنے اور مسئلہ کشمیر کو صحیح معنوں میں اجاگر کرنے پر عالم اسلام کے عظیم لیڈر کے طور پر سامنے آئے ہیں، انہوں نے واضح کیا کہ پچھلے 70 سال میں اقوام متحدہ و دیگر عالمی فورمز پر اسلام کی صحیح تصویر پیش نہ کرنے سے اسلام کو دہشت گردی سے جوڑ دیا گیا۔ وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں کشمیریوں کا مقدمہ پیش کر کے عوام کے دِل جیت لئے ہیں اور اس پر پوری قوم انہیں مبارکباد اور خراجِ تحسین پیش کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کے جرا ت مندانہ موقف کے پیچھے اس قوم کے ساتھ ساتھ پاک فوج کی بھرپور حمایت بھی نظر آ رہی ہے، پاک فوج نے خطے میں قیام امن کیلئے جس طرح ہر قسم کی قربانیاں دیں ان سے صرفِ نذر نہیں کیا جا سکتا۔ خطے کی موجودہ صورتحال میں بھی پاک فوج کا کردار خطے میں سب سے اہم فورس کا ہے، کیونکہ عالمی سطح پر عالم اسلام کی سب سے بڑی قوت پاکستان کو گھیرے میں لانے کیلئے عالم کفر طرح طرح کی سازشیں کر رہا ہے۔

منور جماعتی

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -