فضل الرحمن کا احتجاج کرپشن سے توجہ ہٹانے کیلئے ہے،زاہد حبیب

فضل الرحمن کا احتجاج کرپشن سے توجہ ہٹانے کیلئے ہے،زاہد حبیب

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)سنی تحریک کے جنرل سیکرٹر ی پنجاب محمد زاہد حبیب قادری نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمن کا احتجاج محض اپنی ذاتی کرپشن سے قوم کی توجہ ہٹانے کیلئے ہے،آج کشمیر سے ہمددری مولانا کا سیاسی ڈرامہ ہے۔فضل الرحمن پاکستان کے ازلی دشمن بھارت کی زبان بول رہے ہیں،مسئلہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کیلئے مولانا بھارتی اشاروں پر ناچ رہے ہیں۔جب مولانا کشمیر کمیٹی کے چیئرمین تھے تب کشمیر یاد آیا نہ ہی بھارت مظالم نظر آتے تھے۔آج مدارس کے طلبہ کو گمراہ کرنے کیلئے کشمیر پر سیاسی ڈرامہ بازی شروع کر رکھی ہے۔محمد زاہد حبیب قادری نے کہاہے کہ ملک میں اس وقت اتحاد اور یکجہتی کی ضرورت ہے مسئلہ کشمیرپرعالمی برادری کو متوجہ کرنا ہوگا،مقبوضہ کشمیر سے کرفیو ہٹوایا جائے۔اقوام متحدہ کی مسئلہ کشمیر،فلسطین سمیت دیگر اسلامی ریاستوں میں جاری مسلمانوں پر نا انصافی پر پر اسرار خاموشی سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ پلیٹ فارم صرف یہو د و نصاریٰ کے ذاتی مفادات کے تحفظ کا ضامن ہے۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ اپنی ذمہ داری پوری کرنے میں مکمل ناکام ہوچکی ہے۔، طاقتور ر نے یاستیں انسانی جانوں کے مقابلہ میں اپنی دولت کو ترجیح دی ہے۔بھارت نے کشمیر پر حملہ کیا ہے اب پاکستانی حکومت کو اس کا جواب دینا چاہئے اقوام متحدہ میں پاکستان کا موقف پیش کیا جا چکا ہے۔محمد زاہد حبیب قادری نے کہاکہ حکومت وقت کی غیر متوازن پالیسیوں نے قو م کودو راہے پر لا کھڑا کیا ہے،مہنگائی کا سیلاب حکمرانوں کو بھی لے ڈوبے گا۔بے روزگاری سے نوجوان طبقہ بے راہ روی کا شکار ہو رہا ہے۔ تبدیلی سرکار سرکاری اداروں میں وہی روائتی سیاسی،مسلکی اور رشوت ستانی کے نظام کو پروان چڑہا رہی ہے،الیکشن سے قبل عمران خان نے جتنے وعدے کئے آج وہ سب ریت کی دیوارثابت ہو رہے ہیں۔تبدیلی سرکار نے صرف سیاسی نمبرز کی دوڑ لگائی زبانی جمع تفریق سے کام لیا مگر حکومتیں سوشل میڈیا یا ٹی وی چینلز پر چیخ چلا کر باتیں کرنے سے نہیں چلتیں،عوام کی فلاح و بہبود،مہنگائی کے خاتمہ،بے روززگاری سے چھٹکارے کیلئے عمران خان کو اپنی تقریروں سے آگے بھی کچھ کرنا ہوگا۔اس سے پہلے کے عوام کے صبرو تحمل کا پیمانہ لبریز ہو حکومت اپنے گھرکو جائے عوامی امنگوں کے مطابق نظام حکومت کو بہتر کیا جائے۔زاہد قادری نے کہاکہ ہروں کی تبدیلی کے سوا کچھ بھی ملک میں تبدیل نہیں ہوا ہے۔غیر ملکی قرض کے باوجود بھی قومی خزانہ خالی ہے،عمران خان کیلئے یہ پہلا اور آخری موقع تھا جو انہوں نے اپنی نا اہل وزرا ء کی ٹیم کے ہمراہ ضائع کردیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -