اشتہارات سے متعلق خبر گمراہ کن ہے، محکمہ اطلاعات خیبر پختونخوا

اشتہارات سے متعلق خبر گمراہ کن ہے، محکمہ اطلاعات خیبر پختونخوا
اشتہارات سے متعلق خبر گمراہ کن ہے، محکمہ اطلاعات خیبر پختونخوا

  



پشاور (ویب ڈیسک) محکمہ اطلاعات خیبر پختونخوا نے اس خبر کی سختی سے تردید کردی جس میں کہا گیا تھا کہ ایک وزیر نے اپنے ہی اخبار کو بھاری رقوم کے اشتہار جاری کردیئے اور اسے یا تو رپورٹر کے تخیلات کی پیداوار یا کسی کی طرف سے صوبائی حکومت کے امیج کو خراب کرنے کی سوچی سمجھی کوشش قرار دیا ہے۔

روزنامہ جنگ کے مطابق  ایک تردیدی بیان میں صوبائی محکمہ اطلاعات نے اس امر پر حیرانگی ظاہر کی ہے کہ ایک مشہور بین الاقوامی اخبار کو اس طرح کی بے بنیاد اور غلط معلومات اکٹھی کرنے ، الفاظ کی ہیرا پھیری کرنے ، غلط اعداد وشمار پیش کرنے ا ور حقائق کو مسخ کرکے اپنے قارئین کو گمراہ کرنے کی ضرورت کوکیوں پیش آئی ہے جبکہ محکمہ اطلاعات میں اشتہارات کی تقسیم کار کا ایک منظم اور شفاف میکنزم موجود ہے۔ خبر میں رپورٹر نے دعوی کیا ہے کہ نگران دور حکومت میں صوبائی وزیر اطلاعات کے بھائی کے اخبار کو کم اشتہارات ملے ہیں جبکہ حقیقت یہ ہے کہ نگران دور حکومت میں عموماً مجموعی طورپر اشتہارات کا بہاو کم ہوتا ہے کیونکہ نگران حکومت کے پاس صرف انتخابات کے شفاف انعقاد کا اختیار ہوتا ہےکوئی ترقیاتی منصوبہ شروع کرنے کا اختیار نہیں ہوتا جس کی وجہ سے سرکاری اشتہارات کا مجموعی بہا وکم ہوتا ہے نتیجتاً کسی ایک اخبار نہیں بلکہ تمام اخبارات کے اشتہارات کم ہوتے ہیں۔محکمہ اطلاعات نے صوبائی وزیر کے بھائی کے اخبار کو جاری کئے گئے اشتہارات کے حجم سے متعلق اعداد وشمار کی تردید کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ مذکورہ اخبار سرکاری اشتہارات کے حجم کے حوالے سے اپنے ہم پلہ ا ور ہم عصر اخباروں سے بہت پیچھے ہے اور یہاں تک کہ صوبے کے ایک بڑے اخبارکو مذکورہ اخبار سے چھ گنا زیادہ اشتہارات ملتے ہیں۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور