گٹکا، مین پوری اور ماوا بنانے والوں کی جائیداد ضبطی کا قانون تیار

گٹکا، مین پوری اور ماوا بنانے والوں کی جائیداد ضبطی کا قانون تیار
گٹکا، مین پوری اور ماوا بنانے والوں کی جائیداد ضبطی کا قانون تیار

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سندھ حکومت نے گٹکے ، ماوے اور مین پوری کی روک تھام کیلئے سخت قانون تیار کرلیا ہے ، گٹکا اور ماوا بنانے اور بیچنے والوں کی جائیداد ضبط کرلی جائیگی۔

جیونیوز کے مطابق سندھ میں گٹکے ، ماوے اور مین پوری کی روک تھام کیلئے سخت قانون تیار کرلیا گیاہے ۔ سندھ اسمبلی میں پیش گئے گئے مسودے کے مطابق ماوا ، گٹکا اور مین پوری بنانے اور بیچنے والوں کی جائیداد ضبط کرلی جائے گی ۔مسودہ قانون کے مطابق گٹکا اور مین پوری بنانے اور بیچنے والے کو 6سال قید کی سزا ہوگی ۔

مسودے کے مطابق عوامی مقامات پر گٹکا کھانے اوربیچنے والا بھی گرفتار ہوگا جبکہ گٹکاکھانے والے کوایک سے پانچ لاکھ تک جرمانہ ہوگا اور اس کوجیل بھیجا جائے گا ۔ گٹکا کھانے والا کم سے کم ایک سال اور زیادہ سے زیادہ چھ سال جیل میں رہے گا ۔ گٹکے کی تلاش میں بغیر وارنٹ کسی جگہ چھاپہ مارا جاسکتاہے ۔ دروازے اور کھڑکیا ں بھی توڑی جاسکیں گی ۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -