جیالوں کی مہنگائی کیخلاف تحریک،ریلیوں کا شیڈول تیار

جیالوں کی مہنگائی کیخلاف تحریک،ریلیوں کا شیڈول تیار

  

کوٹ ادو (تحصیل رپورٹر)پاکستان پیپلز پارٹی کے ڈویژنل صدرمیر آصف خان دستی،سابق سینٹر میاں امجدعباس قریشی نے پریس کلب میں مشترکہ پر یس کانفرس (بقیہ نمبر39صفحہ6پر)

کرتے ہوے کہا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے حکم پر آئے روز بڑھتی ہوئی مہنگائی کے خلاف 8اکتوبر کو کوٹ ادو،10اکتوبر مظفرگڑھ 11 اکتوبر کو لیہ اور 12 اکتوبر کو ڈیرہ غازی خان اور راجن پور میں ریلیاں نکالی جائیں گی،وہ ان شہریوں کے تاجران اور ہرمکتبہ فکر کے لوگوں کو شرکت کی دعوت دیتے ہیں،انہوں نے کہا کہ تبدیلی سرکار کی تبدیلی نے عام آدمی کا جینا مشکل کر دیا ہے، آئے روز ٹیکسز میں اضافہ اور منہ روز مہنگائی نے دو وقت کی روٹی کا حصول ناممکن بنا دیا ہے،عام آدمی مہنگائی کی چکی میں پس چکا ہے،آئے روز بجلی،تیل،گیس، أٹاچینی اور اشیاء خوردونوش کی قیمتیں آسمان سے باتیں کر رہی ہیں،ضلع مظفرگڑھ کی سب سے بڑی تحصیل کوٹ ادو کی ہسپتال میں ادویات تک دستیاب نہیں مریضوں سے ٹیسٹوں کی مفت سہولتیں واپس لے لی گئی ہیں، ہسپتال کے ڈاکٹر صرف مریض کو ملتان ریفر کرنے کے لیے بیٹھے ہوئے ہیں،آئے روز ادویات کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے نے جلتی پر تیلی کا کام کیا ہوا ہے،انہوں نے کہا کہ سلیکٹڈ حکومت عوام کو نوکریاں اور گھر دینے کے وعدے کر کے ان سے روزگار اور گھر چھین رہی ہے، پیپلز پارٹی کہ بحال کئے گئے ملازمین بے روزگار کیا گیا ہے،پاکستان پیپلز پارٹی دوبارہ برسر اقتدار میں آکر ان تمام لوگوں کو روٹی کپڑا اور مکان کے علاوہ ملازمتیں اور نکالے گئے ملازمین کو بحال کرے گی، انہوں نے کہا کہ کسان کے ساتھ بھی ظلم کیا جا رہا ہے اس وقت ڈی اے پی کھاد کی بوری 76سو روپے کی کر دی گئی ہے جو کہ اصل بھی نہیں ہے،انہوں نے کہا کہ ادارے کرپٹ ہو گئے ہیں کرپشن کی صورتحال یہ ہے کہ پولیس،ریونیو، رجسٹری برانچ، پٹواری، محکمہ ایریکیشن ہسپتال میں کرپشن عروج پر پہنچ چکی ہے جبکہ ایڈمنسٹریٹر نے آنکھیں بند کی ہوئی ہیں،شہرمیں ٹریفک پولیس غائب ہیں جبکہ اسسٹنٹ کمشنر کوٹ ادو شہر کی حالت بدلنے کی بجائے چھوٹے دکانداروں اور خوانچہ فروشوں کو جرمانہ کرنے پر لگے ہوئے ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ کوٹ ادو میں تجربہ کار اور ایماندار آفیسر تعینات کیا جائے، میر آصف خان دستی نے کہا کہ سرائیکی محاذ کے نام پر عوام کے ساتھ دھوکہ کیا گیا ہے اور صوبے کا وعدہ کرکے لوگوں کو بیوقوف بنایا گیا، صوبے کے حوالے سے ابھی تک کوئی کام نہیں ہوا،انہیں سیکرٹریٹ نہیں صوبہ چاہیے،ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت ہر سطح پر بری طرح ناکام ہو چکی ہے، حالیہ پٹرول اور بجلی کے ریٹ میں اضافے نے گڈگورننس کا پول کھول دیا ہے عام آدمی کی زندگی اجیرن بنانے والی انصافی حکومتی آخری سانسیں لے رہی ہے،وہ وقت دور نہیں جب انصافی حکومت کی کشتی اپنے ہی بوجھ سے ڈوب جاے گی اور انشاء اللہ آنے والا دور پاکستان پیپلز پارٹی کا ہوگا،انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو ملک وقوم کی تقدیر بدلنے کی صلاحیت رکھتے ہیں سابق سینیٹرامجدعباس قریشی نے کہاکہ کامسیٹس یونیورسٹی پرائیویٹ ادارہ اور فرنچائزہے، وسیب کی متوسطہ طلباؤطالبات مستفیدہونامشکل ہے، منسٹر شبیرعلی قریشی کے روڈزمنصوبہ جات کرپشن کا گڑھ ہیں، حلقہ این اے 181 میں کوئیعوامی منصوبہ لانے می ناکام ہیں،انہوں نے کہاکہ صحت کارڈفراڈکارڈہے اس سے صرف امیرسے امیرترہواہے جبکہ غریب کو صحت کارڈنہیں بلکہ مکمل صحت کی طبی امداددی جائے۔

تیار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -