جامعہ زکریا،طلباء کو سہولیات نہ دینے پر حکام سے کل تک جواب طلب

جامعہ زکریا،طلباء کو سہولیات نہ دینے پر حکام سے کل تک جواب طلب

  

  ملتان (خصو صی رپورٹر)لاہور ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج مسٹر جسٹس محمد رضا قریشی نے جامعہ زکریا کے طالب علموں سے کورونا وبا کے دوران میڈیکل، ٹرانسپورٹ، لائبریریز اسپورٹس فیس اور ہاسٹل چارجز سمیت دیگر میں رعایت دینے کے عدالتی حکم کی تعمیل نہ(بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

 کرنے پر توہین عدالت کی درخواست پر سماعت کی عدالت عالیہ نے جامعہ زکریا حکام کو 6 اکتوبر کو جواب کے لیے طلب کرلیا ہے۔یاد رہے کہ لاک ڈان کے دوران تدریسی عمل بری طرح متاثر ہوا اور دیگر طبقات کی طرح طالب علم بھی گھروں تک محدود ہوگئے تھے اور یونیورسٹی کی سہولیات استعمال نہیں کی گئیں لیکن ان سے تمام قسم کی فیسز سمیسٹر کے شروع میں ہی وصول کی جاتی رہیں جس پر دو طالب علموں نے ہائیکورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا اور عدالت کے احکامات پر ایک سال میں بھی عملدرآمد نہیں ہوا جس پر طلبا نے ایک بار سے پھر عدالت سے رجوع کرلیا ہے۔ قبل ازیں عدالت عالیہ میں محمد نعمان علوی اور عبدالعظیم باری نے کونسل سردار محمد رفیق ڈوگر کے ذریعے توہین عدالت کی درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ عدالت عالیہ نے 9 اکتوبر 2020 کو حکم جاری کیا کہ جامعہ زکریا حکام عالمی وبا کے دوران جامعہ زکریا کے طالب علموں کو مذکورہ ادائیگیوں کی مد میں  رعایت دیں لیکن ایک سال کا عرصہ گزر جانے کے باوجود حکام کی جانب سے اس حکم نامے پر عمل درآمد نہیں کیا گیا جس پر انہیں توہین عدالت کی درخواست دائر کرنا پڑی ہے عدالت عالیہ نے عدالتی حکم عدولی پر حکام کو چھ اکتوبر کو طلب کرلیا ہے۔

طلب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -