روپے کی قدرمیں زبردست کمی سے درآمدات مہنگی ہوگئیں، میاں زاہد حسین

 روپے کی قدرمیں زبردست کمی سے درآمدات مہنگی ہوگئیں، میاں زاہد حسین

  

  ملتان (نیوز   رپورٹر)نیشنل بزنس گروپ پاکستان کے چیئرمین، پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولز فورم وآل کراچی انڈسٹریل الائنس کے صدراورسابق صوبائی (بقیہ نمبر20صفحہ6پر)

وزیرمیاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ روپے کی قدرمیں زبردست کمی سے درآمدات مہنگی ہوگئی ہیں مگر اس سے بھی ان میں کوئی کمی نہیں آئی ہے جو پریشان کن ہے کیونکہ اس سے تجارتی خسارہ بہت بڑھ گیا ہے۔ حکومت کے لئے شرح نموکوکم کئے بغیر درآمدات پرقابو پانا ایک چیلنج ہوگا جس میں کامیابی کے علاوہ کوئی آپشن نہیں ہے۔ حکومت شرح نموکو 4.8 فیصد تک بڑھانا چاہتی ہے تاہم ایشیائی ترقیاتی بینک کا خیال ہے کہ شرح نموچارفیصد رہے گی۔ میاں زاہد حسین نے کاروباری برادری سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت کو 37.6 ارب ڈالر کا تجارتی خسارہ ورثے میں ملا تھا جس پرکامیابی سے قابو پا لیا گیا تاہم اقتصادی سرگرمیاں بڑھانے کے لئے پالیسیوں میں نرمی کی گئی جس سے روزگار کی صورتحال قدرے بہتر ہوئی مگر کمزور گورننس اور اشیائے خوردونوش کی ذخیرہ اندوزی کی وجہ سے معیشت کولاحق خطرات بڑھ گئے اور روپیہ تیزی سے کمزور ہوگیا جس سے ملک میں مہنگائی اور بے چینی بڑھی ہے۔ ملک میں انفلیشن کے پیش نظرمرکزی بینک نے شرح سود میں اضافہ کر دیا ہے جس سے روزگار پر برا اثر پڑے گا جبکہ کاروباری برادری نے چودہ دن میں 172 ارب روپے کے قرضے لئے ہیں جس سے انویسٹمنٹ اور روزگار پر بہتر اثر پڑے گا۔ سال رواں کے ابتدائی دو ماہ میں اشیائے خورونوش کی درآمدات پچاس فیصد اضافہ کے ساتھ ڈیڑھ ارب ڈالر کے قریب جا پہنچی ہیں اور اب پالیسی سازدرآمدات کم کرنے کے لئے بعض اقدامات پرغورکررہے ہیں جنھیں جلد ہی منظوری کے لئے اقتصادی رابطہ کمیٹی میں پیش کیا جائے گا۔ میاں زاہد حسین نے مذیدکہا کہ ٹیکسٹائل کی صنعت پر فوکس کی وجہ سے برآمدات میں قدرے اضافہ ہوا ہے جسے جاری رکھا جائے تاہم اب حکومت نے سوفٹ ویئر، انجینئرنگ مصنوعات، ماربل، معدنیات، ادویات، مشروبات، تیار کھانوں، زیورات، قیمتی پتھروں، کیمیکل، گوشت، پولٹری اورسبزیوں کی برآمد کا بھی فیصلہ کیا ہے تاکہ ایک شعبہ پرانحصارختم ہو اوربرآمدات میں ہمہ گیراضافہ ممکن ہو۔ اس سلسلہ میں انجئیرنگ یونٹس لگانے والوں کو پانچ فیصد ٹیکس ریبیٹ کی پیشکش کی گئی ہے جو خوش آئند ہے۔ میاں زاہد حسین نے کہا کہ حکومت انجئیرنگ یونٹس لگانے والوں کو زیادہ مراعات دے تاکہ اس شعبہ کا حقیقی پوٹینشل سامنے آئے اورملک کوفائدہ ہو۔

میاں زاہد

مزید :

ملتان صفحہ آخر -