خانیوال،قبضہ مافیا کا یتیم بچیوں کی اراضی پر قبضہ، دھمکیاں 

  خانیوال،قبضہ مافیا کا یتیم بچیوں کی اراضی پر قبضہ، دھمکیاں 

  

خانیوال (نمائندہ پاکستان)قبضہ مافیانے دو یتیم بہنوں کی ایک کروڑ سے زائد مالیت کی قیمتی سکنی اراضی کو ہتھیا لیا۔ 4 کنال 9 مرلے بوگس کئی چیک دے کر تحریری معاہدہ کرکے قبضہ کرلیا  مظلوم بہنوں نے سول عدالت سے تحریری معاہدے کی منسوخی سمیت سول عدالت سے حکم امتناعی حاصل کرلیا۔قبضہ مافیا کے مسلح افراد نے حکم امتناعی کو پھاڑ دیا اور دونوں یتیم بہنوں کو رقم(بقیہ نمبر11صفحہ6پر)

 دینے کی بجائے فحش گالیاں نکالیں اور جان سے ماردینے کی سنگین دھمکیاں دیکردھکے دے کر بھگا دیا۔بااثر قبضہ مافیا کے ظلم اور زیادتی کا شکاربلاک نمبر ۱۱ خانیوال کی رہائشی مظلوم بہنوں ماریہ ظفراورمریم عمران نے انصاف کے حصول کے لئے میڈیا کو خود پر ہونے والے ظلم وزیادتی کی داستان سناتے ہوئے بتایا کہ ہم نے اپنے اپنے وراثتی حصہ بالترتیب  دو کنال چار مرلے سکنی اراضی مالیتی 70 لاکھ روپے   اور دوکنال پانچ مرلے مالیتی 83لاکھ روپے میں فروخت کرنے کا تحریری معاہدہ چک نمبر 93/10.R   خانیوال کے ساتھ ہوا۔5/5  لاکھ روپے نقد دئیے گئے۔اور مقامی بنک کے متعدد چیک دئیے گئے۔ ماریہ ظفرکو5لاکھ روپے چیک نمبری 1392079  مورخہ 18/06/2021  تک اورمبلغ 10  لاکھ روپے کا چیک نمبری 31392081   مورخہ 04/09/2021  تک دینے کا پابند تھا۔جو مقررہ تاریخ تک کیش نہ ہوئے اور بنک سے ڈس آنر ہوگئے۔مزید بتایا کہ میرے 55 لاکھ روپے تاحال واجب الادا ہیں۔اسی طرح مریم عمران دوسری بہننے بتایا کہ اقرار نامہ کے مطابق 73 لاکھ روپے بقایا ہیں۔جو امتیاز حسین ولد عمرحیات قوم کوڑیانہ سیال ادا نہ کر رہا ہے۔ باربار رقم کا تقاضا کرنے پر بھی نہ دینے اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے پر سول عدالت سے حکم امتناعی حاصل کیا گیا۔ اور متعدد چیک ڈس آنر ہونے پر ڈی پی اوخانیوال کو اندارج مقدمہ کی تحریری دخواستیں دینے پر امتیاز حسین نے ہمراہی محمد جاوید پٹھان،عبدالرحمٰن کمبوہاور تین کس نامعلوم مسلح افراد نے عدالتی حکم کو پھاڑ دیا اور فحش گالیں دیں۔ جان سے ماردینے کی سنگین دھمکیاں دیتے ہوئے ہمیں دھکے دے کر ہمارے رقبہ سے نکال دیا۔قبضہ مافیا کے ظلم کا شکار مظلوم دونوں بہنوں ماری ظفر اور مریم عمران نے میڈیا کی وساطت سے وزیر اعلیٰ پنجاب، آئی جی پنجاب، ایڈیشنل آئی جی جنوبی پنجاب، آرپی او ملتان اور ڈی پی اوخانیوال سے زبردستی دھوکہ اور فراڈ سے ہتھیائی گئی قیمتی ایک کروڑ سے زائد رقم دلائی جائے  اور جان سے ماردینے سمیت سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے پر سخت ایکشن لیتے ہوئے کارروائی کی جائے۔ انہوں نے مزید میڈیا کی وساطت سے کہا ہے کہ اگر ارباب اختیار نے ہمیں ان ظالم قبضہ مافیا سے انصاف نہ ملا اور جانی تحفظ نہ ملا تو وہ ڈی پی او آفس کے سامنے انصاف کے حصول کے لئے دھرنا دیں گے۔ 

دھمکیاں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -