قتل کے مجرم کی 5سال کی سزا کو عمر قید میں تبدیل کرنے کیلئے نوٹس جاری 

قتل کے مجرم کی 5سال کی سزا کو عمر قید میں تبدیل کرنے کیلئے نوٹس جاری 

  

 لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس پاکستان مسٹرجسٹس گلزاراحمد،مسٹرجسٹس اعجازالاحسن،مسٹرجسٹس سیدمظاہر علی اکبر نقوی پرمشتمل بنچ نے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں قتل کے مجرم اطہرکی پانچ سال قیدکی سزا عمر قید میں تبدیل کرنے کیلئے نوٹس جاری کردیا،دوران سماعت فاضل بنچ کے رکن مسٹرجسٹس سید مظاہرعلی اکبر نقوی نے ریمارکس دیئے کہ تین بندے قتل اورتین زخمی ہوئے مجرم کو کم سزا کس قانون کے تحت دی گئی،ٹرائل عدالت کافیصلہ سراسر غلط ہے،کیوں نہ ملزم کی سزا کو بڑھانے کے لئے نوٹس جاری کیا جائے،ایڈیشنل پراسیکیوٹر ملک جعفر نے عدالت کوبتایا کہ واقعہ میں باپ، بیٹا اور ماں قتل دیگر تین افراد زخمی ہوئے،ٹرائل عدالت نے تین مجرموں کو سزائے موت اوراپیل کنندہ کو دس سال قید کی سزا سنائی،ہائیکورٹ نے سزائے موت کے تینوں ملزموں کی سزا کو عمر قیدمیں تبدیل کردیاجبکہ اپیل کنندہ کی دس سال قیدکی سزا کو پانچ سال میں تبدیل کردیاگیا،ملزم کے وکیل خرم کھوسہ نے کہا کہ ملزم اطہر سرکاری ملازم اوراپنی پانچ سالہ سزا مکمل کرکے رہا ہو چکا ہے،شریک ملزم اطہر کی سزا کالعدم قرار دیتے ہوئے بری کیاجائے،فاضل بنچ نے سزا میں اضافہ کے لئے اپیل کنندہ اطہر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے مقدمہ کی سماعت ملتوی کردی۔

نوٹس جاری 

مزید :

صفحہ آخر -