سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈیکس 172.80پوائنٹس بڑھ گیا، ڈالر 25پیسے مہنگا

سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈیکس 172.80پوائنٹس بڑھ گیا، ڈالر 25پیسے مہنگا

  

       کراچی (اکنامک رپورٹر) کاروباری ہفتہ کے پہلے دن پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں کاروباری اتار چڑھاؤ کے بعد تیزی کا رجحان رہا اورکے ایس ای100انڈیکس200پوائنٹس کی اضافے سے ایک بار پھر45ہزار پوائنٹس کی نفسیاتی حد پر بحال ہو گیا جبکہ مارکیٹ کے سرمائے میں 37ارب روہے سے زائد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا،کاروباری تیزی کے سبب63.85فیصد حصص کی قیمتیں بھی بڑھ گئیں۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیرکو کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا سرمایہ کاروں اور مالیاتی اداروں کی ٹیلی کام،بینکنگ،پیٹرولیم،فوڈز سمیت دیگر منافع بخش شعبوں میں خریداری کے باعث ٹریڈنگ کے انڈیکس 45105پوائنٹس کی بلند سطح کو چھو گیا تھا تاہم پرافٹ ٹیکنگ کی خاطر فروخت کے دباؤ کے سبب انڈیکس ایک موقع پر44553پوائنٹس کی کم ترین سطح پر بھی ٹریڈ ہوتا دیکھا گیا تاہم مجموعی طور پر مارکیٹ میں تیزی غالب رہی۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیر کو کے ایس ای100انڈیکس میں 172.80پوائنٹس کا اضافہ ہوا جس سے انڈیکس 44871.70پوائنٹس سے بڑھ کر45044.50پوائنٹس ہو گیا اسی طرھ17608.16پوائنٹس کے اضافے سے کے ایس ای30انڈیکس 17608.16پوائنٹس سے بڑھ کر17684.02پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس30693.59پوائنٹس سے بڑھ کر30844.02پوائنٹس پر جا پہنچا۔کاروباری تیزی کی وجہ سے مارکیٹ کے سرمائے میں 37ارب75کروڑ30لاکھ54ہزار4روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 78کھرب8ارب39کروڑ1لاکھ42ہزار469روپے سے بڑھ کر78کھرب46ارب14کروڑ31لاکھ96ہزار473روپے ہو گیا۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیرکو10ارب روپے مالیت کے26کروڑ72لاکھ19ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ گذشتہ جمعہ کو 9ارب روپے مالیت کے26کروڑ70لاکھ51ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیر کو مجموعی طور پر545کمپنیوں کا کاروبار ہواجس میں سے348کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،192میں کمی اور5کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔کاروبار کے لحاظ سے ٹیلی کارڈ لمیٹڈ2کروڑ56لاکھ،ورلڈ کال ٹیلی کام2کروڑ16لاکھ،سمٹ بینک1کروڑ46لاکھ،بائیکو پیٹرولیم1کروڑ31لاکھ اور غنی گلوبل1کروڑ30لاکھ حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے اعتبار سے رفحان میظ کے بھا? میں 400.00روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے بعد اسکے حصص کی قیمت بڑھ کر10900.00روپے ہو گئی اسی طرح100.01روپے کے اضافے سے کولگیٹ پامولیو کے حصص کی قیمت بڑھ کر2400.00روپے پر جا پہنچی جبکہ سیفائر ٹیکسٹائل کے حصص کی قیمت میں 78.75روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے اسکے حصص کی قیمت گھٹ کر971.25روپے ہو گئی اسی طرح63.33روپے کی کمی سے باٹا پاک کے حصص کی قیمت گھٹ کر1700.00روپے پر آ گئی۔انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر مزیدمہنگا ہو گیا تاہم مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر سستا ہو گیا۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق پیر کو انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالرکی قدر میں 25پیسے کا اضافہ ریکارڈکیا گیا جس سے ڈالر کی قیمت خرید170.50روپے سے بڑھ کر170.75روپے اور قیمت فروخت 170.60روپے سے بڑھ کر170.85روپے پر جا پہنچی تاہم مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں 20پیسے کی کمی واقع ہوئی جس سے ڈالر کی قیمت خرید 171.80روپے سے گھٹ کر171.50روپے اور قیمت فروخت172.20روپے سے گھٹ کر172روپے پر آ گئی۔فاریکس رپورٹ کے مطابق یوروکی قدر میں 30پیسے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے یورو کی قیمت خرید 197.70روپے سے بڑھ کر198روپے اور قیمت فروخت199.70روپے سے بڑھ کر200روپے ہو گئی اسی طرح50پیسے کے اضافے سے برطانوی پونڈ کی قیمت خرید 231.50روپے سے بڑھ کر232روپے اور قیمت فروخت233.50روپے سے بڑھ کر234روپے پر جا پہنچی۔

سٹاک مارکیٹ

مزید :

صفحہ آخر -