لاہور میٹروبس سروس کیلئے 64نئی بسوں کا افتتاح، مسافروں کی گنجائش پہلے سے زیادہ ہو گی: عثمان بزدار

    لاہور میٹروبس سروس کیلئے 64نئی بسوں کا افتتاح، مسافروں کی گنجائش پہلے سے ...

  

         لاہور(جنرل رپورٹر) حکومت کا لاہور کے شہریوں کیلئے آرام دہ اور جدید سفری سہولتیں فراہم کرنے کیلئے بڑا اقدام،وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے لاہور میٹروبس سروس کیلئے 64 نئی ماحول دوست بسوں کے فلیٹ کا افتتاح کر دیا - اس ضمن میں میٹرو بس ڈپو فیروز پور روڈ پر نئی بسوں کو پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے حوالے کرنے کیلئے خصوصی تقریب ہوئی -وزیر اعلی عثمان بزدار تقریب کے مہمان خصوصی تھے- وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے لاہور میٹرو بس سروس کیلئے 64 نئی بسوں کو پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے حوالے کیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے نقاب کشائی کی اور نئی بسوں کا معائنہ کیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار جدید بس کی ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھ گئے اور جدید بسوں میں فراہم کی جانے والی سہولتوں کو سراہا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لاہور اور لاہور کے شہری ہمارے لئے خاص اہمیت رکھتے ہیں۔ میں اورمیری ٹیم لاہور کے مسائل اور ضروریات کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کے لئے ہمہ وقت کوشا ں ہیں۔ٹریفک لاہور کا بہت بڑا مسئلہ ہے۔ ٹریفک کے مسائل کو حل کرنے کے لئے انڈر پاس اور اوورہیڈبرج بنائے جا رہے ہیں۔ ٹرانسپورٹ کے نظام کو بہتر بنانے پر بھی توجہ دی جا رہی ہے۔ شہریوں کو آمدورفت کی بہترین سہولتیں فراہم کرنے کیلئے لاہور میٹروبس کیلئے 64 نئی اور جدید بسوں کی سروس کا آ غاز کیا ہے۔ پہلے سے زیادہ مسافروں کی گنجائش رکھنے والی 18میٹر طویل یہ بس عوام کے لئے بہترین ٹرانسپورٹ ثابت ہوگی۔  نئی بسوں سے لاہور ماس ٹرانزٹ اتھارٹی سوا لاکھ مسافروں کوروزانہ سفر کی بہترین سہولتیں فراہم کرسکے گی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ تحریک انصاف نے شفافیت کی روایت کو آگے بڑھاتے ہوئے دیگر منصوبوں کی طرح اس منصوبے میں سرکاری وسائل بچائے ہیں۔ شفافیت سے Vedaکے ساتھ کنٹریکٹ کر کے مجموعی طورپر 2ارب روپے سے زائد کی بچت کی۔ میٹرو بس کاپرانا معاہدہ ایک غیر ملکی کمپنی کے ساتھ کیا گیا جبکہ موجودہ ایگریمنٹ پاکستانی کمپنی کے ساتھ کیا گیاہے۔ اس معاہدے سے نہ صرف قیمتی زرمبادلہ بچے گا بلکہ مقامی کمپنیاں ترقی کریں گی۔انہوں نے کہا کہ سابقہ دور میں اورنج لائن میٹروٹرین کامنصوبہ شروع کیاگیا۔ہماری حکومت نے سیاسی اختلافات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے وسیع تر قومی مفاد اور انٹرنیشنل کمٹمنٹ کے پیش نظر اورنج لائن میٹروٹرین کے منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچایا۔اورنج لائن میٹرو ٹرین کو فنکشنل بھی کیا اوراس کا کرایہ بھی 40روپے تک محدود رکھااور اس منصوبے کیلئے سالانہ تقریباً 6.3ارب روپے سبسڈی بھی دے رہے ہیں اور مالی مشکلات کے باوجود ان منصوبوں کو جاری رکھا۔ انہوں نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی کے خاتمے کے عزم کے تحت لاہور میں الیکٹرک بسیں چلانے کا پراجیکٹ بھی لارہے ہیں۔ پنجاب کے بڑے شہروں میں بھی نئی ماحول دوست بسیں شروع کی جائیں گی۔ ماضی میں فیڈر بسوں میں مسافر نہ ہونے کے برابر تھے۔ ہم نے عوام کی سہولت کے لئے کیش کرایہ وصول کرنے کا نظام متعارف کرایا۔ کرایہ وصولی سسٹم سے لاہور کی فیڈر بسوں میں مسافروں کی تعداد میں 100فیصد اور ملتان فیڈر بس سروس میں 26فیصداضافہ ہو۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ پنجاب وہیکل انسپکشن اینڈ سرٹیفکیشن سسٹم کا نفاذ ماحولیاتی آلودگی اور ٹریفک حادثات میں کمی کے لئے بہت اہمیت رکھتا ہے۔ 27اضلاع میں وہیکل انسپکشن اینڈ سرٹیفکیشن سنٹرزقائم کئے جا چکے ہیں۔ان سنٹرز کا دائرہ کار پورے پنجاب تک وسیع کیاجائے گا۔ کورونا کے باعث حکومت نےVICS کے جاری کردہ فٹنس سرٹیفکیٹس میں 6ماہ کی توسیع کی۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کے 9اضلاع میں ایکسل لوڈ مینجمنٹ سسٹم اس سال کے آخر تک لا یا جا رہاہے۔اس سسٹم سے سڑکوں کی ٹوٹ پھوٹ میں کمی آئے گی اور تعمیر ومرمت کے ا خراجات بھی بچائے جاسکیں گے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی کے دائرہ کار کو وسعت دے کر اسے پنجاب ٹرانسپورٹ کمپنی بنانے کی منظوری دے دی گئی ہے۔ پنجاب ٹرانسپورٹ کمپنی کے تحت فیصل آباد،بہاولپور، میانوالی او رڈیرہ غازی خان میں اربن ٹرانسپورٹ کی جدید ترین سہولت فراہم کی جائے گی۔ ٹھوکر نیاز بیگ پرعالمی معیار کے مطابق ماڈرن بس ٹرمینل 3ارب روپے کی لا گت سے تعمیر کیاجائے گا اور اس بس ٹرمینل کو ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیاجائے گا۔ ٹرانسپورٹ کے نظام کا شمار عوام کی بنیادی ضروریات میں کیا جاتا ہے۔ شفافیت اور مستقبل کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے لاہور سمیت تمام بڑے شہرو ں میں ماس ٹرانزٹ ٹرانسپورٹ کا سسٹم متعارف کرانے کا عزم رکھتے ہیں۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کا منشور عوام کی فلاح و بہبود ہے اور ہم اسی منشور او رعز م کے تحت عوام کی خدمت کرتے رہیں گے۔صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ جہانزیب کھچی اور ایم ڈی پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی نے بھی تقریب سے خطاب کیا- صوبائی وزراء میاں محمود الرشید، یاور بخاری،محسن لغاری، اراکین قومی و صوبائی اسمبلی صداقت عباسی، کرامت کھوکھر، ندیم بارا، چیف سیکرٹری، سیکرٹری ٹرانسپورٹ اوراعلی حکام بھی اس موقع پر موجود تھے-وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارکی زیر صدارت پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ بورڈ میں اعلی سطح کا اجلاس منعقد ہواجس میں سالانہ ترقیاتی پروگرام برائے سال 2021-22ء پر پیش رفت کا جائزہ لیا گیا-اجلاس میں چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات نے اے ڈی پی پر سہ ماہی پیشرفت کے بارے میں رپورٹ پیش کی-وزیر اعلی عثمان بزدارنے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے تحت ڈویلپمنٹ پراجیکٹ پر کام کی رفتار مزید تیز کرنے کی ہدایت کی- وزیر اعلی عثمان بزدار نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ  3 سال میں ساڑھے 15 ہزار سے زائد پراجیکٹ کی تکمیل خوش آئند ہے- رواں مالی سال میں 3975ترقیاتی منصوبے مکمل کئے جائیں گے - رواں مالی سال کے لئے 95 فیصد ترقیاتی منصوبوں کی منظو ری دی جا چکی ہے - ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل یقینی بنائی جائے-جاری شدہ فنڈز کا بروقت استعمال ہر صورت یقینی بنایا جائے - فلاح عامہ کے منصوبوں پر کام کی رفتار کو مزید تیز کیا جائے-سیکرٹریز باقاعدگی سے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے تحت منصوبوں پر پیشرفت کا جائزہ لیں -انہوں نے کہا کہ متعلقہ افسران آن گراؤنڈ جا کر بھی سکیموں کو چیک کریں -منصوبوں میں اعلی معیار اور شفافیت پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا-وزیر اعلی عثمان بزدار نے واضح کیا کہ اچھی کارکردگی پر شاباش دیں گے اور سپورٹ کریں گے - کارکردگی کا مظاہرہ نہ کرنے والوں کو جوابدہی کا سامنا کرنا ہو گا-عثمان بزدار نے کہا کہ560 ارب روپے کے تاریخی ترقیاتی پروگرام کے ثمرات ہر صورت عوام تک پہنچائے جائیں -وزیر اعلی نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے پنجاب کی تاریخ میں پہلی بار جنوبی پنجاب کے لئے 35فیصد فنڈز مختص کئے ہیں -جنوبی پنجاب کے لئے مختص فنڈز کی رنگ فنسنگ کی گئی ہے - جنوبی پنجاب کے لئے علیحدہ اے ڈی پی بک مرتب کی گئی ہے - وزیر اعلی عثمان بزدارنے مزید کہا کہ پنجاب مانیٹرنگ اینڈ اویلیوایشن پالیسی کا مسودہ تیار کر لیا ہے - پالیسی کے حتمی مسودہ کی منظوری پنجاب کابینہ دے گی -وزیر اعلی کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ بورڈ سالانہ ترقیاتی پروگرام کے تحت 241 ارب روپے جاری کر چکا ہے - چیف سیکرٹری، انسپکٹر جنرل پولیس، معاون خصوصی برائے اطلاعات حسان خاور، سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو،پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ اور تمام محکموں کے سیکرٹریز اور اعلی حکام نے اجلاس میں شرکت کی- عثمان بزدارسے معاون خصوصی برائے اطلاعات حسان خاور نے ملاقات کی۔ پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ بھی اس موقع پر موجود تھے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے حسان خاور کیلئے نیک تمناؤ ں کا اظہار کیا اور عوام کی فلاح و بہبود کیلئے کئے گئے اقدامات کو اجاگر کرنے کیلئے گائیڈ لائنز دیں۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ عوام کو ریلیف دینا ہماری حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ پنجاب کے محکموں میں اصلاحات لا کر عوام کیلئے آسانیاں پیدا کی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 3 برس میں ماضی کی غلط پالیسیوں کو درست کیا اور آج پنجاب ترقی کے سفر میں دیگر صوبوں سے آگے ہے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے فلاح عامہ کے اقدامات کو ہر فورم پر بھرپور طریقے سے عوام کے سامنے لانے کی ہدایت کی۔

اجلاس

عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -