پنڈورا کی تحقیقات کا اعلان مضحکہ خیز، کیا عمران خا ن اپنے وزراء کیخلاف سپریم کورٹ جائیں گے؟ پی ڈی ایم پیپلز پارٹی 

پنڈورا کی تحقیقات کا اعلان مضحکہ خیز، کیا عمران خا ن اپنے وزراء کیخلاف ...

  

       اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ جو زیادہ چورچور شور کررہے تھے، آج پنڈورا پیپرز  میں سب سے زیادہ چور انکے ہیں۔پشاور میں میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ پاناما کے بعد اب پنڈورا لیکس کھل گیا ہے، بیوروکریٹس اورعمران خان کابینہ بھی اس لیکس میں شامل ہے، جو زیادہ چورچور شور کررہے تھے، آج پنڈورا میں سب سے زیادہ چور ان کے ہیں۔مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ دھاندلی سے آئی حکومت آئندہ انتخابات میں اصلاحات کی بات کر رہی ہے،  چوروں کے ہاتھوں سے انتخابی اصلاحات قبول نہیں کریں گے۔ عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے سربراہ اسفندر یار ولی نے کہا  کہ کرپشن میں ملوث حکومت کا پنڈورا پیپرزکی تحقیقات کا اعلان مضحکہ خیز ہے، ووٹ چوری کرکے مسلط سلیکٹڈ وزیراعظم کا احتساب بھی سلیکٹڈ ہے۔  اسفندر یار ولی کا کہنا تھا کہ دوسروں پرکرپشن کے بہتان لگانے والے لیکس میں نام آنے پر خاموش ہیں، حکومت کا تحقیقات کا اعلان کرنا اپنے ساتھیوں کو بچانے کی کوشش کے سوا کچھ نہیں ہے۔مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان نے قوم کو فیک منصوبوں کا چورن بیچا،اب ان کی سیاست اور حکومت نواز شریف کے نواسے کے خلاف فیک نیوز کی مرہون منت ہے۔ مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ وہ معاشرہ کبھی کامیاب نہیں ہوتا جہاں آئین اور قانون کی بالادستی نہیں ہوتی، عمران صاحب آج کی تقریر میں پنڈورا پیپرز میں سامنے آنے والے وزرا کے استعفے قوم کو دیتے، عمران خان اپنے تمام اے ٹی ایمز سے استعفے لیں تاکہ ان کے خلاف قانونی کارروائی ہو سکے۔پیپلز پارٹی کی رہنما سینیٹرشیری رحمان نے کہا  کہ پنڈورا پیپرز میں وزیراعظم کے قریبی لوگوں کے نام آنا ہمارے لیے کوئی تعجب کی بات نہیں، ہم جانتے ہیں کرپشن فری پاکستان کے نعرے کھوکھلے ہیں۔شیری رحمان نے کہا کہ احتساب اپوزیشن کو نشانہ بنانے کا ایک طریقہ ہے،کیا وزیراعظم اپنے لوگوں کے خلاف سپریم کورٹ جائیں گے یا صرف رپورٹ طلب کی جائیگی؟ 

رد عمل

مزید :

صفحہ اول -