کرپشن میں ملوث حکومت کا پنڈورا پیپرز کی تحقیقات کا اعلان مضحکہ خیز: اسفند یار ولی 

کرپشن میں ملوث حکومت کا پنڈورا پیپرز کی تحقیقات کا اعلان مضحکہ خیز: اسفند یار ...

  

          پشاور(آ ئی این پی)عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ خود کرپشن میں ملوث حکومت کا پنڈورا پیپرز کی تحقیقات کا اعلان کرنا مضحکہ خیز ہے، ووٹ چوری کرکے پاکستان پر مسلط سلیکٹڈ وزیر اعظم کا احتساب بھی سلیکٹڈ ہے، عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کیلئے سلیکٹڈ وزیراعظم تحقیقات کا شوشہ چھوڑ رہے ہیں۔ پیر کو اے این پی سربراہ اسفندیار ولی خان نے حالیہ پنڈورا لیکس پر ردعمل ظاہرکرتے ہوئے کہا کہ ہے کہ دوسروں پر کرپشن کے بہتان  لگانے والے لیکس میں نام آنے پر خاموش ہیں۔ لیکس  میں حکومتی اراکین کے ناموں نے  حکومت کے اخلاقی جواز بارے سوالات کھڑے کر دئیے ہیں۔ پنڈورا پیپرز پر حکومت کی جانب سے تحقیقات کا اعلان کرنا اپنے ساتھیوں کو بچانے کی ایک بھونڈی کوشش کے سوا کچھ نہیں۔ حقیقت یہ ہے کہ عمران خان کی  پارٹی چوروں، لٹیروں اور کرپٹ چہروں کا ٹولہ ہے۔ اس سے پہلے پانامہ لیکس اور آف شور لیکس میں بھی سب سے زیادہ پی ٹی آئی اور انکے اتحادی اراکین  ہی کے نام تھے، وہ آج بھی آزاد گھوم رہے ہیں۔ تحقیقات کے نام پر صرف زبانی جمع خرچ سے عوام کو بیوقوف نہیں بنایا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ اے این پی پاکستان کی واحد سیاسی جماعت ہے جس کا کسی ایک بھی ذمہ دار یا کارکن کا نام کسی لیکس میں نہیں آیا۔ پنڈورا پیپرز میں شامل تمام سیاستدانوں، سابق فوجی افسران اور ان کے اہل خانہ سمیت دیگر تمام افراد کو قانون کے کٹہرے میں لایا جائے اور ان سے ایک ایک آنے کا حساب لیا جائے۔ حکومت کو دیگر معاملات کے ساتھ ساتھ مہنگائی اور بے روزگاری کو قابو کرنے کیلئے اقدامات کرنے ہوں گے اور ملک کو دیوالیہ ہونے سے بچانا ہوگا۔ 

اسفند یارولی

مزید :

صفحہ آخر -