پارلیمنٹ اور قومی عمارتوں پر حملوں کی مذمت کرتے ہیں، میاں مقصود

پارلیمنٹ اور قومی عمارتوں پر حملوں کی مذمت کرتے ہیں، میاں مقصود

لاہور( نمائندہ خصوصی ) امیر جماعت اسلامی لاہورمیاں مقصود احمد نے پارلیمنٹ اور قومی عمارتوں پر حملوں کی مذمت کرتے ہوئے اسے لمحہ فکریہ قرار دیا۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان اسلام کیلئے بڑی قربانیوں کے بعد حاصل کیاگیا تھا۔ اب تک اس کے قیام کے حقیقی مقاصد کی تکمیل کیلئے اقدامات نہیں کیے گئے۔کتنے ہی دھرنے،کتنے پارلیمنٹ پر دھاوے بولے جائیں اور کتنے ہی استعفے لیے جائیں کچھ حاصل نہیں ہوگا۔نظام کی تبدیلی کے بغیر ملک وقوم کی تقدیر نہیں بدل سکتی ۔انھوں نے کہا کہ موجودہ بحران میں متحدہ قومی موومنٹ اور چند دیگر پارٹیاں آرمی کورٹیک اوور کرنے کے پیغام بھجوارہی ہیں لیکن اچھی بات یہ ہے کہ فوجی قیادت اقتدار میں آنا ملکی مفاد میں نہیں سمجھتی ہے جو کہ ملکی تاریخ کا ایک خوش آئند پہلو ہے۔ اور ان حالات میں فوج مزید تجربات کی متحمل نہیں ہوسکتی ۔انھوں نے مزید کہا کہ دھرنا مظاہرین کی طرف سے سرکاری عمارتوں کے اندرگھس کر توڑپھوڑ کرنا اور اپنے ساتھ قیمتی سامان لے جانا شرکاءکے شایان شان نہیں۔ اخباری اطلاعات کے مطابق ٹی وی ہیڈکواٹر پر حملے کے موقع پر مظاہرین اپنے ساتھ مسجد کی گھڑی،سپیکرز اور صفیں بھی اپنے ساتھ لے گئے۔ سیاست کے اندر اس قسم کے رویے کسی اور قسم کی سوچ کی عکاسی کرتے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1