بہتر صحت کیلئے رات کو کس طرح سونا چاہیے؟ تازہ تحقیق جو شائد شادی شدہ افراد کو بے حد پریشان کردے

بہتر صحت کیلئے رات کو کس طرح سونا چاہیے؟ تازہ تحقیق جو شائد شادی شدہ افراد کو ...
بہتر صحت کیلئے رات کو کس طرح سونا چاہیے؟ تازہ تحقیق جو شائد شادی شدہ افراد کو بے حد پریشان کردے

  

شکاگو (نیوز ڈیسک) نیند کی خرابی طرح طرح کے جسمانی و ذہنی مسائل کو جنم دیتی ہے اور خصوصاً شادی شدہ جوڑوں میں تلخی اور ناچاقی کا باعث بھی بنتی ہے، لیکن ایک دلچسپ تحقیق کے مطابق اگر شادی شدہ جوڑے اپنی نیند بہتر کرنا چاہتے ہیں تو انہیں ایک دوسرے سے کچھ دوری اختیار کرنا ہوگی اور اکٹھے سونے کی بجائے اکیلے اکیلے سونا ہوگا۔

کلینکل سائیکالوجسٹ وینڈی ٹراکسل، جن کا تعلق یونیورسٹی آف پیٹسبرگ سے ہے، کہتی ہیں کہ تحقیق کے دوران معلوم ہوا کہ تقریباً 25 فیصد جوڑے اکٹھے نہیں سوتے بلکہ علیحدہ علیحدہ سوتے ہیں، اور ان میں سے 60 فیصد نے بتایا کہ وہ اکیلے سونے کے بعد بہتر طور پر نیند پوری کرپارہے ہیں اور زیادہ ہشاش بشاس زندگی گزار رہے ہیں۔

وینڈی ٹراکسل کا کہنا ہے کہ اگر خواتین کا دن اچھا نہ گزرے تو وہ رات کو اچھی طرح سو نہیں پاتیں، اس کے برعکس مرد اگر رات کے وقت ٹھیک طور پر سونا پائیں تو ان کا دن اچھا نہیں گزرتا اور نہ صرف دفتر میں مسائل پیش آتے ہیں بلکہ شریک حیات کے ساتھ بھی نوک جھونک ہوجاتی ہے۔ اس نوک جھونک کے نتیجے میں خاتون کو پھر رات کو ٹھیک طور پر نیند نہیں آتی، اور یوں بدمزگی اور تلخی کا سلسلہ چل نکلتا ہے جس میں سے باہر نکلنا مشکل ہوجاتا ہے۔ وینڈی ٹراکسل کی تحقیق کے مطابق اگر میاں بیوی علیحدہ علیحدہ سوئیں تو اسی صورت میں دونوں سکون سے سوئیں گے اور بے خوابی و تلخی کے شیطانی چکر سے باہر آسکیں گے۔

مزید : تعلیم و صحت