لاہور ،نشتر کالونی میں گارمنٹس فیکٹری کی چھت گرنے سے 4مزدور جاں بحق ،18زخمی

لاہور ،نشتر کالونی میں گارمنٹس فیکٹری کی چھت گرنے سے 4مزدور جاں بحق ،18زخمی

لاہور(کرائم سیل)نشتر کالونی کے علاقہ میں واقع گارمنٹس فیکٹری کی چھت زور دار دھماکے سے گرگئی جس کے ملبے تلے دب کر چارمزدور جاں بحق جبکہ اٹھارہ زخمی ہوگئے اطلاع ملنے پر امدادی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں اور چار گھنٹوں کی مسلسل کوشش کے بعد امدادی ٹیموں نے ملبے کو ہٹایا اورتمام زخمیوں کو فوری طور پر ہسپتال پہنچایا جہاں چار افراد تیس سالہ طارق ،تیس سالہ محمد علی ،بیس سالہ محمد بوٹا ،اور شہزاد زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے جبکہ زخمیوں عمران اکبر ،کاشف ،عمران جمیل ،فریاد ،ارشد ،طفیل ،محمد بوٹا ،بشیر ،عرفان ،زاہد ،عابد ،حنیف ،طارق ،ظہیر،ارشد تنویر، محمد علی اور محسن کو طبی امدادی فراہم کی جارہی ہے ان میں سے 3افراد کی حالت نازک بتائی جاتی ہے ۔ پولیس نے اس واقعہ کے بعد فیکٹری کے منیجر سمیت چھ افراد کو گرفتار کرلیا۔ جبکہ فیکٹری مالک رانا عقیل موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا واقعہ کے بعد جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین نے فیروز پور روڈ بلاک کرکے انتظامیہ اور پولیس کے خلاف احتجاج کیا اور ٹائر جلائے جس کے باعث ٹریفک کا نظام درہم برہم ہوگیااطلاع ملتے ہی پولیس افسران موقع پر پہنچ گئے اور مظاہرین کو فیکٹری مالک کی فوری گرفتاری کی یقین دہانی کروائی ۔جس کے بعد مظاہرین پر امن طور پر منتشر ہوگئے ۔ اہل علاقہ اور پولیس نے نمائندہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ رانا عقیل کی گارمنٹس فیکٹری نشتر کالونی روہی نالے کے قریب واقع تھی جہاں چالیس کے قریب افراد فیکٹری کا کام کرتے تھے اس فیکٹری میں جین کی پینٹ ،شرٹ ،ٹوپیاں وغیرہ تیار کی جاتی تھیں مقامی افراد کے مطابق اس فیکٹری میں گارمنٹس کا سامان دس سالوں سے تیار ہورہا تھافیکٹری میں دوشفٹوں میں کام کیا جاتا تھا دس سال قبل جب فیکٹری تعمیر کی گئی تو اس کی چھت مٹی سے تیار کی گئی تھی جس کے بعد چھت کو مضبوط بنانے کیلئے کام نہ کیا گیا اور جب بارش ہوتی تو پانی بھی جمع ہوجاتا تھا چند روز قبل چھت پر مزید مٹی ڈال دی گئی اس کے علاوہ چھت پر ڈرم وغیرہ بھی موجود تھے جس کے باعث چھت پر مزید وزن آچکا تھااسی وجہ سے فیکٹری کی چھت گزشتہ روز اچانک زور دار دھماکے کے ساتھ گر گئی جس کے ملبے تلے آکر چار افراد جاں بحق ہوگئے جبکہ اٹھارہ کے قریب محنت مزدوری کرنے والے زخمی ہوگئے زخمیوں میں بھی تین افراد کی حالت انتہائی نازک بیان کی جارہی ہے ،تاہم اس سلسلہ میں مقامی پولیس نے بتایا کہ قانون کے مطابق فیکٹری مالک رانا عقیل ،منیجر محمد اقبال ،غلام مجتبی ،مظہر نثار ،محمد عمران ،عدانان حسین ،مجاہد خان وغیرہ چھ افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے جاں بحق ہونے والوں کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ تمام افراد مقامی رہائشی تھے اور عرصہ تین سالوں سے فیکٹری میں کام کرتے تھے ۔ دوسری طرف وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے روہی نالہ کے قریب فیکٹری کی چھت گرنے کے واقعہ کی خبر کا نوٹس لیتے ہوئے انتظامیہ سے رپورٹ طلب کر لی ہے اور حاد ثہ کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے حادثے میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے لواحقین سے ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے انتظامیہ کو ہدایت کی ہے کہ زخمی افراد کو علاج معالجے کی بہترین سہولتیں فراہم کی جائیں۔ حادثے کی اطلاع ملتے ہی وزیراعلیٰ نے امدادی سرگرمیوں سے متعلقہ اداروں کو ہدایت کی کہ ملبے تلے دبے افراد کو بحفاظت نکالنے کیلئے امدادی سرگرمیاں تیز کی جائیں اور اس ضمن میں تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں۔

مزید : صفحہ اول