پنجاب ڈرگ رولز2015،ادویات کا کاروبار کرنیوالوں کیلئے زہرقاتل ہے، نورمہر

پنجاب ڈرگ رولز2015،ادویات کا کاروبار کرنیوالوں کیلئے زہرقاتل ہے، نورمہر

لاہور(جنرل رپورٹر) پاکستان میں ہربل و نیوٹراسیوٹیکل ادویات کی تیاری کیلئے وفاقی حکومت ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کی جانب سے 67برسوں کے بعد صرف چار کمپنیوں کو لائسنس جاری کرنا خوش آئند ہے۔ ان خیالات کا اظہار معروف فارماسسٹ وقانون دان نورمہر نے کیا۔انہوں نے مزید کہاکہ پنجاب ڈرگ رولز2015ء فارماسسٹوں ،فارماانڈسٹری اور میڈیکل سٹورزکے مالکان اورادویات کا کاروبار کرنے والے تمام افراد کیلئے زہرقاتل ہے کیونکہ اس قانون کے نافذ ہونے کے بعد کوئی بھی عزت دارآدمی لائسنس یافتہ ہونے کے باوجودمیڈیسن کا کاروبارنہیں کرسکتا۔نورمحمد مہر نے کہاکہ حکومت اس حوالے سے اپنی خامیوں اور نااہلی کو چھپانے کیلئے خود غیرقانونی اور غیر انسانی ہتھکنڈے استعمال کررہی ہے۔ہربل ادویات کی تیاری اور سیلز پر ڈرگ انسپکٹروں کے ذریعے دھونس دھمکی اور اسے جبراً نافذکرنا مریضوں کے ساتھ زیادتی ہے ان کا مزید کہنا تھا کہ جعلی ادویات کے بارے میں قوانین اور لائسنس یافتہ پروفیشنل فارماسسٹوں کو جاری کردہ لائسنسوں پر کام کرنے والوں کے ساتھ امتیازی سلوک ختم ہونا چاہیے اور جو لوگ جعلی ادویات بنانے والوں کو سزائیں دی جائیں۔

مزید : صفحہ آخر