مردار گوشت کی فروخت کے خلاف موثر قانون سازی کے لئے دائر درخواست ثمر آور قرار دے کر نمٹا دی

مردار گوشت کی فروخت کے خلاف موثر قانون سازی کے لئے دائر درخواست ثمر آور قرار ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ کو پنجاب حکومت کی طرف سے آگاہ کیا گیا ہے کہ حرام اور مردار گوشت کے حوالے سے فوڈ اتھارٹی ترمیمی آرڈیننس کی منظوری دے دی گئی ہے اور ان جرائم پر سزا 5سال قید اور 20لاکھ روپے جرمانے تک بڑھا دی گئی ہے جبکہ ان جرائم کو ناقابل ضمانت بھی قرار دیا گیا ہے۔مسٹر جسٹس اعجاز الاحسن نے پنجاب حکومت کے اس بیان کی روشنی میں حرام اور مردار گوشت کی فروخت کے خلاف موثر قانون سازی کے لئے دائر درخواست ثمر آور قرار دے کر نمٹا دی۔

نمٹا دی

مزید : صفحہ آخر