بھارت نے افغانستان میں بیٹھ کر امریکی شہ پر پاکستان کو میدان جنگ بنایا: حافظ سعید

بھارت نے افغانستان میں بیٹھ کر امریکی شہ پر پاکستان کو میدان جنگ بنایا: حافظ ...

لاہور(نمائندہ خصوصی )امیر جماعۃ الدعوۃ پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ پاکستان قومیت، لسانیت، وطنیت کا نہیں بلکہ لاالہ الااللہ کا ملک ہے جس کی حفاظت و دفاع ہمارا دینی فریضہ ہے۔قیام پاکستان کے مقاصد کی تکمیل سے ملک میں امن قائم ہو گا۔انڈیا نے افغانستان میں بیٹھ کرامریکی شہہ سے پاکستان کو میدان جنگ بنایا۔فرقہ واریت کا خاتمہ اور امت کے وجود کو مستحکم کرنا ہے۔بھارتی مسلمانوں میں بیداری کی لہر پیدا ہورہی ہے ان کے ذہنو ں کو بدلنے کے لئے فینٹم جیسی پروپیگنڈا فلمیں بنائی جارہی ہیں۔امت کو صرف کلمہ طیبہ پر ہی متحد کیا جا سکتا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سرگودھا میں مرکزی عیدگاہ گراؤنڈ میں خطبہ جمعہ کے دوران ہزاروں افراد کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ حافظ محمد سعید نے کہا کہ فرقہ واریت سے امت مسلمہ کا بہت زیادہ نقصان ہواہے۔ ہمیں ایک امت بننا چاہئے اور جو نظام نبی کریم ؐ لے کر آئے ہمیں اس کی فکر کرنی چاہئے۔ تحریک پاکستان میں نعرہ لگایا گیا تھا لاالہ الاللہ اور یہی نعرہ مدینہ میں بھی لگا تھا۔ پاکستانی قوم خوش نصیب ہے جنہوں نے یہ ملک کلمہ طیبہ کی بنیاد پرحاصل کیا۔انہوں نے کہا کہ گاندھی ہندو مسلم بھائی بھائی کا نعرہ لگا کرقیام پاکستان کی تحریک کو نقصان پہنچانا چاہتا تھا لیکن مسلمانوں نے تحریک پاکستان میں لاالہ الااللہ کا نعرہ لگایا جس میں بنگال کے مسلمانوں نے اس تحریک میں حصہ لیااورپھر پنجاب سمیت پورے ہندوستان کے مسلمان کھڑے ہوگے اور ممبئی، امرتسر، گورداسپور ،کلکتہ بلکہ پورے انڈیامیں ایک زبردست تحریک کھڑی ہوئی جس کا ایک ہی نعرہ تھا، پاکستان کا مطلب کیا لا الہ الا اللہ۔ اس کلمے نے بنگالی، پٹھان، بلوچی، سندھی، دہلی والوں سب مسلمانوں کو جوڑ دیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے قیام پاکستان کے مقاصد حاصل کرنے ہیں۔دنیا تسلیم کر رہی ہے کہ پاکستان کی ٹیکنالوجی بہترین ہے۔ الحمدللہ یہ اللہ کا احسان ہے۔ اللہ نے ہمیں موقع دیا ہے۔فرقہ واریت کا خاتمہ او ر امت کے وجود کو مستحکم کرنا ہے۔پاکستان کو صحیح معنوں میں اسلامی پاکستان بنانے کی ضرورت ہے۔

مزید : صفحہ آخر